پبی میں سماج دشمن عناصر کیخلاف نیشنل ایکشن پلان کے تحت آپریشن شروع

پبی میں سماج دشمن عناصر کیخلاف نیشنل ایکشن پلان کے تحت آپریشن شروع

پبی ( نما ئندہ پاکستان)معاشرئے کے امن وامان کو تہہ و بالا کرنے والے سماج دشمن عناصر کے خلاف نیشنل ایکشن پلان کے تحت موثر اپریشن شروع ۔دوران سرچ اپریشن گھر گھر تلاشی کے دوران 01 انتہائی مطلوب خطرناک مجرم اشتہاری سمیت 80 مشتبہہ افراد گرفتار۔ 02 بندوق ،01 پستول اورکارتوس برآمد،40 مشتبہہ موٹر سائیکلز کو حراست میں لے کرتحقیقات کے لیے پولیس اسٹیشن منتقل کر دیا گیا ۔کرایہ داری ایکٹ قانون کے تحت سینکڑوں مکانات کو چیک کرتے ہوئے بغیر قانونی دستاویزات رہائش پزیرافراد کے خلاف 10مقدمات درج،جبکہ بزریعہ جدید ٹیکنالوجی CRVS-350 افراد کو چیک کیا گیا اور ڈیجیٹل ٹیکنالوجی VVS-320 گاڑیوں کی باریک بینی کیساتھ چیکنگ کی گئی۔تفصیلات کے مطابق صوبائی پولیس سربراہ صلاح الدین خان کے احکامات کی روشنی میں ضلعی پولیس سربراہ ایس ایس پی قاسم علی(PSP )کی جانب سے ضلع بھر میں پائیدار امن وامان کے قیام اور جرائم پیشہ افراد ،مجرمان اشتہاریوں ،خطرناک سنگین جرائم میں ملوث ملزمان ،واضح زریعہ معاش نہ رکھنے والے مشکوک افراد،مشتبہہ افراد کے خلاف پولیس کمانڈوز کے کومبنگ اپریشن میں پبی سرکل میں DSP ہیڈکوارٹرز کیڈٹ شہنشاہ گوہر خان،DSP اسحاق خان ،DSPلقمان خان کی سربراہی میں SHO تھانہ پبی انسپکٹر شاد علی خان،ASI سرتاج خان ،کی قیادت میں RRF سکواڈ ،ایلیٹ فورس ،لیڈیز پولیس سکواڈ،بم ڈسپوزل یونٹ،DSB سکواڈ ،آپریشن پولیس کی کامیاب کاروائی کے دوران پولیس اور سیکیورٹی فورسز کو مطلوب 01انتہائی خطرناک مجرم اشتہاری کو کمانڈوز ایکشن میں گرفتار کر لیا گیا۔لیڈیز پولیس سکواڈ کے ہمراہ گھر گھر تلاشی کے دوران 80مشکوک افراد کو حراست میں لے لیا گیا۔ملزمان کے قبضے سے خطرناک اسلحہ02 بندوق 01 پستول اور کارتوس برآمد کر لیے گئے۔بدوران سرچ آپریشن 40مشکوک موٹر سائیکلوں کو حراست میں لے لیا گیا۔ایکٹ کرایہ داری قانون کے تحت سینکڑوں مکانات کو چیک کرتے ہوئے10 بغیر قانونی دستاویزات رہائش پزیر افرادکے خلاف مقدمات درج کر دیے گئے۔ بزریعہ جدید ٹیکنالوجی VVS اور CRVS سینکڑوں مشکوک افراد اور گاڑیوں کی باریک بینی سے چیکنگ کی گئی ۔ضلعی پولیس سربراہ ایس ایس پی قاسم علی (PSP )نے کامیاب اپریشن پر جوانوں اور آفسران کی کارکردگی کو سراہتے ہوئے ان کے پروفیشنل ازم صلاحیتوں کی تعریف کی ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر