رسا چغتائی کے انتقال پر اکادمی ادبیات کا اظہار افسوس

رسا چغتائی کے انتقال پر اکادمی ادبیات کا اظہار افسوس

کراچی (اسٹاف رپورٹر)اکادمی ادبیات پاکستان کے چیئرمین ڈاکٹر محمد قاسم بگھیو اور سندھ کے ریزیڈنٹ ڈائریکٹر قادر بخش سومرو نے اردو کے ممتاز شاعر اور صدارتی ایوارڈ یافتہ رسا چغتائی کے انتقال پر گہرے رنج و غم کا اظہار کیا ہے رسا چغتائی 1928 میں ہندستان کی ریاست جے پور کے شہر سوائی مادھپور میں پیدا ہوئے تھے محروم ۱950 میں ہجرت کر کے پاکستان آئے وہ مختلف اخبارات سے بھی وابستہ رہے حکومت پاکستان نے ان کے ادبی خدمات کے اعتراف میں2001 میں انہیں صدارتی ایوارڈ براء حسن کارکردگی سے نوازا رسا چغتائی غزل کے شاعر طرزشاعر کی حیثیت سے جانے جاتے تھے ان کی تصانیف میں ریختہ ۔ زنجیر ۔ ہمسائیکی ۔ تصنیف ۔ چشمہ ڈھنڈے پانی کا۔ تیرے آنے کا انتظار رہا شامل ہیں ، آپ ادبی دنیا میں نمایا ں مقام رکھتے تھے آپ کے انتقال سے پاکستانی ادب کا بہت بڑا نقصان ہے جس کو پر کرنے میں بہت بڑا وقت لگے گا۔جب کہ اکادمی ادبیات سندھ کے ریزیڈنٹ ڈائریکٹر نے مرحوم کے جنازے نماز میں بھی شرکت کی،اور مرحوم کے لیئے دعاء مغرفت کی۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر