غلط انجکشن ‘ دو سالہ بچہ جاں بحق ‘ ورثا کا عطائی کیخلاف شدید احتجاج

غلط انجکشن ‘ دو سالہ بچہ جاں بحق ‘ ورثا کا عطائی کیخلاف شدید احتجاج

میاں چنوں‘محسن وال ( نمائندہ خصوصی) عطائی ڈاکٹر کے مبینہ انجکشن سے دو سالہ بچہ جاں بحق ہوگیا ۔تفصیل کے مطابق بوراچوک میاں چنوں میں عطائی ڈاکٹر اجمل نے چک نمبر120پندرہ ایل کے رہائشی دوسالہ بچے کو انجکشن لگا دیا جس کی وجہ سے بچے کی حالت غیر ہوگئی جسے فوری طور پر بچے کی والدہ تحصیل ہسپتال میاں چنوں لے آئی لیکن دوسالہ اللہ رکھا ہسپتال پہنچنے سے پہلے ہی دم توڑ چکا (بقیہ نمبر37صفحہ12پر )

تھا بچے کے والد فلک شیر کے مطابق میرے بیٹے کوبخار تھا اور پیٹ میں درد تھا عطائی ڈاکٹر نے کلینک پر آتے ہی بغیر چیک کئے بچے کو انجکشن لگا دیا اور بچے کی حالت بگڑ گئی اور بعد بچے کی حالت خراب ہونے پر کلینک سے نکال دیا واضح رہے کہ مذکورہ عطائی ڈاکٹر اجمل کے ہسپتال میں کئی لوگ جان کی بازی ہار چکے ہیں لیکن محکمہ صحت کا عملہ اور پنجاب ہیلتھ کیئر کمیشن عطائی ڈاکٹر کے خلاف اثرورسوخ کی وجہ سے کاروائی نہیں کررہا ،بچے کے ورثاء نے تحصیل ہسپتال میاں چنوں میں احتجاج کرتے ہوئے محکمہ صحت کے اعلی حکام سے مطالبہ کیا ہے کہ عطائی ڈاکٹر اجمل کا کلینک سیل کیا جائے۔

شدید احتجاج

مزید : ملتان صفحہ آخر