بھگت سنگھ فاؤنڈیشن دونوں ملکوں میں تناؤ ختم کرنا چاہتی ہے،امتیاز رشید قریشی

بھگت سنگھ فاؤنڈیشن دونوں ملکوں میں تناؤ ختم کرنا چاہتی ہے،امتیاز رشید قریشی

لاہور(سٹی رپورٹر) بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن پاکستان کے زیر اہتمام پاکستان اور ہندوستان میں عوامی سطح پر ویزوں کے اجراء پر پابندیاں عائد کرنے کے خلاف اور 2019ء کو امن کے سال کے طور پر منانے کے لئے پریس کلب شملہ پہاڑی لاہور کے باہر شمعیں روشن کی گئیں، قیادت عبدالرشید قریشی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ، سرپرست اعلیٰ بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن پاکستان نے کی اس تقریب سے مسٹر راجہ ذوالقرنین ایڈووکیٹ، سپریم کورٹ سابق سیکرٹری سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن، امتیاز رشید قریشی چیئرمین بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن پاکستان، محمد اقبال مغل حسن حسینی سیکرٹری اطلاعات بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن پاکستان ، پنڈت بھگت لال کھوکھر(بالمیکی مندر نیلا گنبد لاہور)، سید الماس حیدر کاظمی ایڈووکیٹ سپریم کورٹ، حبیب احمد جام(سینئر وائس چیئرمین بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن پاکستان) پیر زادہ سید شمشاد حسین قادری، ملک منصف اعوان ایڈووکیٹ سربراہ جسٹس پارٹی محمد رفیق بدر، شوکت چوہدری، محمد اقبال محمد ایڈووکیٹ چیئرمین استاد دامن اکیڈمی، منظور علی بھٹی صدر تحریک وفاق پاکستان، ملک متین صاحب، سید فیروز شاہ گیلانی ایڈووکیٹ نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ فاؤنڈیشن پاکستان کے اس پروگرام کا مقصد پاکستان اور ہندوستان کے درمیان بڑھتے ہوئے شدید تناؤ کو کم کرنا ہیں۔

کیونکہ ہندو برادری کو آئین پاکستان کے تحت تمام آئینی اور بنیادی حقوق حاصل ہیں جبکہ ان کے پیاروں کے انتقال کے بعد ان کی ارتھیاں گزشتہ سال سے ان کے گھروں میں موجود ہیں اور ہندوستانی سرکاران ارتھیوں کو ہندو دھرم کے مطابق گنگا میں بہانے کے لئے ویزے جاری نہیں کر رہی جبکہ ہندوستان کی بیٹیاں پاکستا ن میں بیاہی ہوئی ہیں اور اسی طرح پاکستان کی بیٹیاں ہندوستان میں بیاہی ہوئی ہیں ان کو بھی اپنے ماں باپ، بہن بھائیوں اور پیاروں سے ملنے کے لئے ویزے جاری نہیں کئے جا رہے بھگت سنگھ میموریل فاؤنڈیشن پاکستان کا موقف ہے ہم شمعیں جلا کر پیغام دینا چاہتے ہیں کہ انڈیا سرکار اور پاکستانی سرکار اپنی ویزا پالیسیوں پر نظر ثانی کریں۔

بھگت سنگھ

مزید : میٹروپولیٹن 1