پروٹیز سے بدترین شکست پر سرفراز احمد کی انوکھی منطق پیش

پروٹیز سے بدترین شکست پر سرفراز احمد کی انوکھی منطق پیش

کیپ ٹاؤن(بیورورپورٹ)قومی ٹیم کے کپتان سرفراز احمد نے کہا ہے کہ اگر ہماری ٹیم میں جنوبی افریقہ کے خلاف ٹیسٹ سیریز سے قبل 2یا 3پریکٹس میچز کھیلے ہوتے تو نتائج مختلف ہوسکتے تھے ۔ کیپ ٹاون ٹیسٹ میں جنوبی افریقہ کے ہاتھوں 9وکٹوں سے شکست کے بعد سرفراز احمد کاکہنا تھا کہ ہم نے پہلی اننگز میں زیادہ رنز نہیں بنائے،اگر 250سے300رنز تک بنالیتے تو شاید آخری اننگز میں ہمیں فائدہ ہوسکتا تھا کیوں کہ چوتھی اننگز میں بھی یہ پچ فاسٹ بالرز کو مدد دے رہی تھی ، اگر آپ ایک ہی سیشن میں پانچ وکٹیں گنوا دیں تو پھر آپ کا میچ میں واپس آنا انتہائی مشکل ہوجاتا ہے لیکن ہمارے بلے بازوں نے جس طریقے سے تیسرے دن کے دوسرے سیشن میں بیٹنگ کی اسی طرح آپ ٹیسٹ کرکٹ میں سیکھتے ہیں ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ میرے خیال میں ہمیں ٹیسٹ سے سیریز سے پہلے دو سے تین پریکٹس میچز کھیلنے چاہیے تھے جو ہمارے لیے ایک آئیڈیل سچوئیشن ہوتی تاہم ہمیں صرف ایک پریکٹس میچ کھیلنے کو ملا ،ہمار ے بلے بازوں نے اس ٹیسٹ میں بہادری دکھائی اور امید ہے کہ جوہانسبرگ ٹیسٹ میں ہمیں اس کا فائدہ ہوگا ۔

مزید : کھیل اور کھلاڑی