تحریک انصاف کی حکومت ملکی سلامتی کیلئے خطرہ بن چکی ،احسن اقبال

تحریک انصاف کی حکومت ملکی سلامتی کیلئے خطرہ بن چکی ،احسن اقبال

نارووال(نامہ نگار، نمائندہ خصوصی) سابق وفاقی وزیرداخلہ اور مسلم لیگ(ن) کے رہنما احسن اقبال نے میڈیاسے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان کی حکومت ملک کی سلامتی کیلئے خطرہ بن چکی ہے۔ ہمارے دفاعی بجٹ کاحجم ساڑھے 9 ارب ڈالر تھا جواب کم ہوکر 7.9 ارب ڈالر رہ گیا ہے۔ پی ٹی آئی حکومت نے ملک میں اتنی بے یقینی پیدا کر دی ہے کہ سرمایہ دار یا تو اپنا سرمایہ ملک سے لے گیا ہے یا انڈر گراؤنڈ کردیا ہے۔ عمران خان نے ہمیشہ پر تشدد اور گالی گلوچ کی بات کی ہے،عمران خان ملک کو ایک ’’فاشسٹ اسٹیٹ ‘‘بنانا چاہتے ہیں۔ عمران خان چاہتے ہیں کہ انکے اقتدار کے آگے کوئی آواز نہ اٹھا سکے وہ بھول گئے ہیں کہ جس ملک میں ایوب خان، ضیاء الحق اور مشرف اقتدار قائم نہیں رکھ سکے ہیں وہاں عمران خان جنرل تو نہیں پھر یہ کہاں سے’’ فاشسٹ ازم‘‘ کے ذریعے اپوزیشن اور پاکستان کے عوام کا گلہ گھونٹ لے لیں گے انہیں واپس جمہوریت پر آنا ہو گا اور ملک اجازت نہیں دے گا کہ یہ اپنی فاشسٹ پالیسی کے ذریعے پاکستان کے مستقبل سے کھیلیں ہماری معیشت کو تباہ کریں،ہم نے پانچ سال می معیشت کو کھڑا کر دیا تھا ملک میں امن قائم کیا تھا ،توانائی کے بحران پر قابو پا لیا تھا ،اور اب وقت تھا کہ ملک میں صنعتی اور زرعی انقلاب آنا تھا لیکن اس حکومت نے سب کریش کر دیا، عمران دنیا بھر میں جا کر ملک کو کرپٹ ثابت کر رہے ہیں جس ملک کا وزیر اعظم خود کہے کہ ہمارا ملک کرپٹ ہے وہاں کون سرمایہ کاری کرے گا؟چیئرمین سینٹ کو بدلنے کے حوالے سے کیے گئے سوال پر احسن اقبال نے کہا کہ چیئرمین سینٹ کو ایک بندوبست کے ذریعے منتخب کروایا گیا تھا،اگر پیپلز پارٹی سنجیدگی کا مظاہرہ کرے تو اپوزیشن اپنا چیئرمین سینٹ لا سکتے ہیں، اپوزیشن کا وفد نیب کے چیئرمین سے ملاقات کرے گانیب کے چیئرمین سپرئم کورٹ کے سابق جج ہیں اس حوالے سے قابل احترام ہیں، وہ مطالبہ کرتے ہیں کہ اس کا نوٹس لیا جائے پی ٹی آئی کے اندر جتنے وزراء یا لوگ جا چکے ہیں ان پر اپوزیش سے زیادہ سنگین مقدمات تھے ان سب کو مکمل تحفظ حاصل ہے اپوزیشن کے لوگ ابھی تحقیقات کا عمل جاری ہوتا ہے تو گرفتار کر لیا جاتا ہے پی ٹی آئی کے لوگ جن پر ریفرنس دائر ہوچکے ہیں وہ آزادنہ گھوم رہے ہیں نواز شریف روزانہ پیشیاں بھگت رہے ہیں، نواز شریف اور شہباز شریف پر کوئی اپنے اختیار کا ناجائز استعمال،پیسے کی ہیر پھیر ثابت نہیں ہو سکی تو مفروضے پر یہ سزا دی جارہی ہے ،آمدن سے زیادہ اثاثوں کے فرضی کیس بنانا کو ئی مشکل کام نہیں آپ میرے سپرد ایک ایجنسی کریں اور میں ایک گھنٹے میں پاکستان کے کسی بھی شہری پر آمدن سے زیادہ اثاثوں کا کیس بنا دوں گا یہ انتقامی کاروائیاں کی جارہی ہیں۔

احسن اقبال

مزید : صفحہ اول