1986ء سے کسی نے قائداعظم یونیورسٹی کی زمین واگزار نہیں کرائی ،ریاست اپنی ایک انچ جگہ کسی کو نہیں دے گی ،شہریار آفریدی

1986ء سے کسی نے قائداعظم یونیورسٹی کی زمین واگزار نہیں کرائی ،ریاست اپنی ایک ...

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے کہا ہے کہ قائداعظم یونیورسٹی کی 200ایکڑ اراضی پر قبضہ کیا گیا، 1986ء سے کسی نے قائداعظم کی زمین واگزار نہیں کرائی، جس نے قبضہ مافیا کا ساتھ دیا اس کا بھی احتساب ہوگا، ریاست اپنی ایک انچ زمین کسی کو نہیں دے گی۔ اتوار کو وہ میڈیا سے گفتگو کررہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ درس گاہوں پر قبضے کیے جارہے ہیں۔ قائداعظم یونیورسٹی کی 200ایکڑ اراضی پر قبضہ کیا گیا۔ کوئی ذاتی رنجش نہیں قانون پر عمل کرایا جائے گا۔ سرکاری زمین وا گزار کرائی جائے گی۔ متاثرین کی بحالی کا کام کیا جائیگا۔ جس نے قبضہ مافیا کا ساتھ دیا اس کا بھی احتساب ہوگا۔ کسی کو خدشہ ہے تو عدالتیں آزاد ہیں۔ 1709ایکڑ زمین واگزار کرانے کا ٹاسک دیا گیا ہے۔ شہریار آفریدی نے کہا کہ انتقامی سیاست پر یقین نہیں رکھتے۔ قائداعظم یونیورسٹی کی زمین 1986ء سے کسی نے واگزار نہیں کرائی۔ کوئی کتنا بھی بڑا ہو اس کو مثال بنا دیں گے۔ ریاست اپنی ایک انچ زمین کسی کو نہیں دے گی۔

شہریار آفریدی

مزید : صفحہ اول