بہادر طالب علم اعتزاز حسن کو ہم سے بچھڑے 5 برس بیت گئے

بہادر طالب علم اعتزاز حسن کو ہم سے بچھڑے 5 برس بیت گئے

ہنگو،اسلام آباد (این این آئی) ہنگو میں دہشت گردی کا مقابلہ کرنے والے بہادر طالب علم اعتزاز حسن کو ہم سے بچھڑے 5 برس بیت گئے۔6 جنوری 2014 کو ہنگو میں گورنمنٹ ہائی اسکول ابراہیم زئی کے نویں جماعت کے طالب علم اعتزاز حسن نے اسکول کے اندر ایک مشکوک شخص کو جانے سے روکا تو خود کش حملہ آور نے اسکول کے مرکزی گیٹ پر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔واقعہ میں اعتزاز نے اپنی جان تو قربان کردی تاہم اسکول میں موجود 400 سے زائد طالب علموں کی جان بچالی۔اعتزاز حسن کو اس بہادری پر تمغہ شجاعت سے بھی نوازا جاچکا ہے اور ان کے اعزاز میں کئی اعلانات بھی کیے جاچکے ہیں لیکن ابھی تک وہ اعلانات پورے نہیں کیے جاسکے۔ شہید اعتزاز کی یاد میں سیلوٹ کے نام سے ایک پاکستانی فلم بھی بنائی جاچکی ہے۔شہید اعتزاز حسن کی پانچویں برسی پر وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ شہید نوجوان اعتزاز حسن نے اپنی جان قربان کرکے سو سے زائد بچوں کی جانیں خودکش حملے سے بچائیں۔

اعتزاز حسن

مزید : صفحہ اول