مولانا فضل الرحمان ناکامیوں میں گھر چکے ، پھربھی مستقل مزاجی سے ”پرائی شادی میں عبد اللہ دیوانہ“ بنے ہوئے ہیں:ارشادبھٹی

مولانا فضل الرحمان ناکامیوں میں گھر چکے ، پھربھی مستقل مزاجی سے ”پرائی شادی ...
مولانا فضل الرحمان ناکامیوں میں گھر چکے ، پھربھی مستقل مزاجی سے ”پرائی شادی میں عبد اللہ دیوانہ“ بنے ہوئے ہیں:ارشادبھٹی

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کار ارشاد بھٹی نے کہاہے کہ مولانا فضل الرحمان ناکامیوں میں گر چکے ہیں لیکن پھر بھی مستقل مزاجی سے” پرائی شادی میں عبداللہ دیوانہ “بنے ہوئے ہیں۔

جیونیوز کے پروگرام ”رپورٹ کارڈ“ میں گفتگو کرتے ہوئے ارشاد بھٹی نے کہا کہ اللہ نہ کرے کہ میرے بچوں پر مریم اور بلاول مسلط ہوں، ہماری پارٹیوں میں جمہوریت نہیںبلکہ یہ ایک موروثی غلامی ہے ، یہ پارٹیاں ذاتی فیکٹریاں اور کاروبارہیں، یہ ایسے کاروبار ہیں جن سے کبھی کسی کو خسارہ نہیں ہوا ، فائدہ ہی فائدہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف جیل میں ہوکر تاحیات قائد ہیں اور شہبازشریف نیب حراست میں ہوکر مسلم لیگ ن کے صدر ہیں اور درمیان میں کبھی کبھی جاوید ہاشمی جیسے لوگ آتے ہیں جو ماریں کھا کر درمیان سے ہٹ جاتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ آصف زرداری کو تین سال رہنے والوں نے ہی انصاف دیا ہے ، اگر اور ادارے بھی کھڑے کئے ہوتے تو جے آئی ٹی کی ضرورت نہ پڑتی ۔ان کا کہنا تھا کہ ہمارے اپوزیشن والے بڑے سیانے لوگ ہیں ، ان کو پتہ ہے کہ کب الگ ہونا ہے اور کب اکھٹا ہونا ہے ، جب ان کو اپنا فائدہ نظر آئے یہ اکھٹے ہوجائیں ۔انہوں نے کہا کہ مولانا فضل الرحمان ناکامیوں میں گھر چکے ہیں لیکن پھر بھی مستقل مزاجی سے” پرائی شادی میں عبداللہ دیوانہ“ بنے ہوئے ہیں اور مستقل مزاجی سے ناکام ہورہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن کے متحد نہ ہونے کی ذمہ دار مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی ہیں۔

مزید : قومی