”آپ کے بھتیجے کے خلاف منشیات سمگلنگ کا مقدمہ درج ہوا ہے“ صحافی نے اس بارے میں سوال پوچھا تو شہریار آفریدی نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی داد دیں گے

”آپ کے بھتیجے کے خلاف منشیات سمگلنگ کا مقدمہ درج ہوا ہے“ صحافی نے اس بارے ...
”آپ کے بھتیجے کے خلاف منشیات سمگلنگ کا مقدمہ درج ہوا ہے“ صحافی نے اس بارے میں سوال پوچھا تو شہریار آفریدی نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی داد دیں گے

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے اپنے رشتہ دار کے خلاف منشیات سمگلنگ کا مقدمہ درج ہونے پر واضح کیا ہے کہ کوئی بھی قانون سے بالا تر نہیں ہے اور اگر کوئی ان کا رشتے دار ہے تو اسے مثالی سزا دی جائے گی۔

ایک صحافی نے وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی سے سوال کیا ’منشیات کے کیس میں ایک ایف آئی آر کٹی ہے جو نادر آفریدی کے خلاف کاٹی گئی ہے، ان کے بارے میں کہا جا رہا ہے کہ وہ آپ کے بھانجے یا بھتیجے ہیں۔ ایف آئی آر پر آپ کی سرکاری رہائش کا پتا درج کیا گیا ہے، اس پر آپ کیا کہیں گے؟‘۔

صحافی کی جانب سے پوچھے جانے والے سوال پر وزیر مملکت برائے داخلہ شہریار آفریدی نے کہا قانون سب پر لاگو ہوتا ہے، میں ہوں یا میرے گھر کے افراد ہوں، کوئی قانون سے بالا تر نہیں ہے۔

شہریار آفریدی نے کہا کہ ان کے والد صاحب نے تین شادیاں کی ہیں اور ان کا بہت بڑا خاندان ہے لیکن کوئی بھی ہو، جس نے ان کے گھر کا ایڈریس دیا ہے اس کو مثالی سزا دی جائے گی۔ ’ میرا بھانجا ہو یا بھتیجا یا گھر کا کوئی بھی فرد ہو، اسے سزا دی جائے گی‘۔

وزیر مملکت برائے داخلہ نے کہا کہ یہ قانون کی سب سے بڑی کامیابی ہے کیونکہ اگر کوئی وزیر کا رشتہ دار ہے تو ایف آئی آر خارج بھی ہوسکتی تھی لیکن موجودہ حکومت میں نہ صرف ایف آئی آر کٹی بلکہ اس شخص کو سزا بھی دی جائے گی۔

۔۔۔ ویڈیو دیکھیں ۔۔۔

مزید : قومی /سیاست /علاقائی /اسلام آباد