آرمی ایکٹ میں ترمیم، پیپلز پارٹی نے 3 تجاویز پیش کردیں

آرمی ایکٹ میں ترمیم، پیپلز پارٹی نے 3 تجاویز پیش کردیں
آرمی ایکٹ میں ترمیم، پیپلز پارٹی نے 3 تجاویز پیش کردیں

  



اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پیپلز پارٹی نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے حوالے سے آرمی ایکٹ میں ترمیم کے معاملے پر 3 تجاویز پیش کردیں۔

نجی ٹی وی جیو نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کے حکومتی بل میں پاکستان پیپلز پارٹی نے تین ترامیم کی تجویز پیش کردی۔ پیپلزپارٹی نے آرمی ایکٹ میں ترامیم کےلئے حکومتی تجاویز پر تحفظات کا اظہار کیا ہے، قائمہ کمیٹی برائے دفاع کے اجلاس میں پیپلز پارٹی کی ترامیم کی تجاویز پر حکومت نے غور کرنے کی حامی بھر لی۔پیپلز پارٹی نے قائمہ کمیٹی دفاع اور قومی اسمبلی سیکریٹریٹ کو تجاویز پیش کردی ہیں۔

ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی نے تجویز دی ہے کہ آرمی ایکٹ میں ترمیم کے حکومتی بل سے توسیع کا معاملہ عدالت میں چیلنج نہ کرنے کی شق ہٹائی جائے۔ پی پی نے تجویز دی ہے کہ پارلیمنٹ کو وجوہات بتانے کے بعد توسیع دی جاسکتی ہے لیکن دوبارہ تعیناتی نہیں کی جاسکتی۔ پی پی کی تیسری تجویز کے مطابق وزیر اعظم کو پارلیمنٹ کی قومی سلامتی کمیٹی میں سروسز چیفس کی مدت ملازمت بڑھانے کی وجوہات دیناہوں گی۔

مزید : اہم خبریں /قومی