سکھر تا حیدر آباد‘ ایم 6کی تعمیر نجی کمپنی سے تعمیر کرانیکا فیصلہ

  سکھر تا حیدر آباد‘ ایم 6کی تعمیر نجی کمپنی سے تعمیر کرانیکا فیصلہ

  



ملتان(نمائندہ خصوصی)وفاقی حکومت کی جانب سے پشاور کراچی موٹرویز کے مسنگ سیکشن سکھر تا حیدر آباد ایم 6 کی تکمیل پرائیویٹ سیکٹرسے تعمیر،آپریٹ اور ٹرانسفر(بی اوٹی)پالیسی کے تحت نجی کمپنی سے تعمیر کرانے کا فیصلہ کر لیا گیا، اندازے کے مطابق سیکشن کی تعمیر پر 204 ارب روپے کا خرچہ آئے گا، موٹروے کا سیکشن 296 کلومیٹر پر محیط ہو گا، تکمیل کے بعد کراچی سے پشاور تک موٹروے (بقیہ نمبر12صفحہ12پر)

منصوبے مکمل ہو جائیں گے موٹروے ایم 6 سکھر تا حیدر آباد پر کام کا آغاز جلد کر دیا جائے گا، منصوبے کی تعمیر نجی کمپنی سے کروانے کا حکومتی فیصلہ سامنے آیا ہے جبکہ منصوبے کے لیئے تخمینہ لاگت کے مطابق 204 ارب روپے فنانس کیا جائے گا،منصوبے کا پی سی ون مکمل ہو چکا ہے جبکہ لینڈ ایکوزیشن کا سلسلہ بھی جاری ہے، با وثوق ذارئع کے مطابق موٹروے ایم 6 کا ٹھیکہ بھی موٹروے ایم فائیو کو ریکارڈ مدت میں مکمل کرنے والی چینی کنسٹرکشن کمپنی کو ملنے کا امکان ہے، موٹروے کے 296 کلومیٹر کے سیکشن کی تعمیر کے لیئے کنسٹرکشن کمپنی سے معاہدہ کیا جائے گا جو اس کی تعمیر پر سرمایہ لگائے گی جبکہ 25 سال تک موٹروے کا یہ سیکشن اس کمپنی کے زیر اہتمام ہی چلتا رہے گا، نیشنل ہائی ویز اتھارٹی کی جانب سے موٹروے کے اس سیکشن کے لیئے تمام کاغذی کام مکمل کر لیا گیا ہے، موٹروے منصوبہ 33 ماہ میں مکمل کیا جائے گا، جو سکھر سے ایم فائیو انٹر چینج سے شروع ہو گا اور خیر پور، نوشہرو فیروز، نواب شاہ، مٹیاری، ہالہ اور جامشورو سے ہوتا ہوا حید رآباد میں ایم نائن موٹروے سے جا ملے گا، موٹروے منصوبے کی تکمیل سے سکھر تا حیدر آباد ساڑھے پانچ گھنٹے کا سفر صرف اڑھائی گھنٹے میں طے ہو گا جبکہ 15 انٹر چینجز بھی موٹروے منصوبے کا حصہ ہوں گے۔

فیصلہ

مزید : ملتان صفحہ آخر