رجسٹریشن شروع‘ 232 ارب روپے کے بانڈز فروخت

    رجسٹریشن شروع‘ 232 ارب روپے کے بانڈز فروخت

  



ملتان(نیوز رپورٹر)وفاقی حکومت کی جانب سے چالیس ہزار روپے مالیت کے پرائز بانڈز کی رجسٹریشن کا عمل شروع کرنے پر شہریوں نے232ارب روپے کے بانڈز فروخت کر دیئے۔40ہزارکے بانڈز میں سرمایہ کاری برائے نام رہ گئی ہے۔بتایا گیا ہے کہ حکومت کی جانب سے40ہزار کے بے(بقیہ نمبر49صفحہ12پر)

نامی بانڈز بند کرنے کے بعد پانچ ماہ میں عوام نے 232 ارب روپے کے بانڈز فروخت کر ڈالے۔معیشت کو دستاویزی بنانے اور چالیس ہزار روپے مالیت کے پرائز بانڈز کی رجسٹریشن کرنیکی خاطر حکومت نے مئی 2019 میں 40 ہزار روپے مالیت کے بے نامی بانڈز کو بند کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔مئی 2019 میں بانڈز میں کل سرمایہ کاری جو 951 ارب روپے تھی کم ہوکر اکتوبر 2019 میں 719 ارب روپے تک محدود رہ گئی۔ اس دوران سب سے زیادہ 40 ہزار روپے مالیت کے بانڈز فروخت ہوئے۔ پانچ ماہ کے دوران 40 ہزار والے بانڈز میں سرمایہ کاری 258 ارب روپے سے کم ہوکر 26 ارب روپے تک باقی رہ گئی۔دوسری جانب نام سے رجسٹرڈ 40 ہزار کے بانڈز میں سرمایہ کاری 6 ارب 10 کروڑ روپے سے بڑھ کر 16 ارب 90 کروڑ روپے تک پہنچ گئی۔

فروخت

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...