سرما تعطیلات میں 12جنوری تک توسیع، پرائیویٹ سکولوں کا انکار، آپریشن کی تیاریاں

سرما تعطیلات میں 12جنوری تک توسیع، پرائیویٹ سکولوں کا انکار، آپریشن کی ...

  



ملتان ‘ڈیرہ (سٹاف رپورٹر‘ سٹی رپورٹر) شدید سردی کے باعث ملتان سمیت پنجاب کے سرکاری و پرائیویٹ سکولز 16 روزہ تعطیلات کے بعد آج کھلنے کے بعد ایک بار پھر سے بند کر نے کاحکم جاری کر دیا گیا۔حکومت پنجاب کی جانب سے 12 جنوری تک موسم سرما کی تعطیلات جاری رکھنے کا نوٹیفیکیشن جاری کر دیا گیا - ملتان سمیت جنوبی پنجاب کے سرکاری اور نجی تعلیمی اداروں میں 20 جنوری سے موسم سرما کی تعطیلات کا آغاز ہوا تھا جو 5 جنوری تک جاری رہا۔گزشتہ روز6 جنوری کو شیڈول کے (بقیہ نمبر47صفحہ7پر)

مطابق تعلیمی ادارے کھول دیئے گئے جبکہ گزشتہ روز ہی پنجاب حکومت کی جانب سے موسم سرما کی تعطیلات میں 7 روز کا اضافہ کردیا گیا۔اس سلسلے میں باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیاجس کے بعد تعلیمی ادارے 13 جنوری سے اپنا تدریسی عمل پھر شروع کریں گے۔کمشنر شان الحق نے موسم سرما تعطیلات کے نوٹیفکیشن پر ڈویژن بھر میں عملدرآمد کروانے بارے ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ڈپٹی کمشنرز اپنے اضلاع میں فوری چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دیکر کارروائی کریں۔12 جنوری تک کسی نجی سکول کو کھولنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔نجی سکول کھلنے کی شکایت پر قانونی کارروائی ہوگی۔انہوں نے مزید کہا کہ شدید سرد موسم کے پیش نظر طلباء کو سہولت فراہم کرنا بزدار حکومت کی ترجیح ہے۔ حکومت پنجاب نے سرکاری سکولوں میں چھٹیاں 12 جنوری 2020 تک بڑھانے کا اعلان کر دیا۔صوبے میں تمام سکول 13 جنوری 2020 سے کھلیں گے۔اس سلسلے میں باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا گیا۔کمشنر شان الحق نے موسم سرما تعطیلات کے نوٹیفکیشن پر ڈویژن بھر میں عملدرآمد کروانے بارے ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ ڈپٹی کمشنرز اپنے اضلاع میں فوری چھاپہ مار ٹیمیں تشکیل دیکر کارروائی کریں۔12 جنوری تک کسی نجی سکول کو کھولنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔نجی سکول کھلنے کی شکایت پر قانونی کارروائی ہوگی۔انہوں نے مزید کہا کہ شدید سرد موسم کے پیش نظر طلباء کو سہولت فراہم کرنا حکومت کی ترجیح ہے۔ بیشتر پرائیویٹ سکولز 20دسمبر سے5جنوری تک موسم سرما کی تعطیلات کے دوران کھلے رہے‘ اب تعطیلات میں 12جنوری تک توسیع کے حکومتی نوٹیفکیشن پر بھی عملدرآمد سے انکار کر دیا۔ شدید سردی سے طلباو طالبات کی حالت غیر‘ اذیت میں مبتلا ہو گئے‘ حکومت اپنے آرڈرز پر عملدرآمد کرانے میں ناکام ہو گئی۔بتایا گیا ہے کہ بیشتر پرائیویٹ سکولز نے حکومتی احکاما ت کی دھجیاں بکھیرنا معمول بنالیا ہے۔ حکومتی نوٹیفکیشن کو اہمیت نہیں دیتے‘ اسی کے باعث ملتان سمیت جنوبی پنجاب میں متعدد پرائیویٹ سکولز 20دسمبر سے5جنوری تک موسم سرما کی تعطیلات کے دوران کھلے رہے اور طلبا وطالبات کو زبردستی سکولز آنے پر مجبور کر دیا گیا‘ اب شدید سردی کی لہر کے باعث حکومت پنجاب نے تعطیلات میں 12جنوری تک توسیع کر دی ہے تو اس پر بھی عملدرآمد نہیں کیاجارہا اور شدید سردی میں طلباوطالبات کو سکولز آنے کا حکم دیا گیا ہے اور دھمکی دی گئی ہے کہ اگر محکمہ تعلیم کو اس کی شکایت کی تو اچھا نہیں ہوگا‘اس صورتحال میں طلباو طالبات اور ان کے والدین پریشان ہیں‘ تعلیمی حلقوں کے مطابق پرائیویٹ سکولز فیسیں وصول کرنے کے لئے طلباوطالبات کو تعطیلات میں بھی زبردستی سکولز آنے پر مجبور کر رہے ہیں‘ دوسری جانب وزیر اعلی ٰپنجاب‘ صوبائی وزیر تعلیم‘ سیکرٹری تعلیم سکولز‘ کمشنرز و ڈپٹی کمشنرز کی طرف سے دعووں و اعلانات تو کئے جارہے ہیں مگر صورتحال اس کے برعکس ہے اور بیشتر نجی سکولز کھلے ہیں‘ صوبے‘ ڈویژن اورضلع کی سطح پر کوئی ہیلپ لائن قائم نہیں کی گئی کہ جس پر عوام کی طرف سے فون‘ واٹس ایپ یا ای میل کے ذریعے اطلاع دینے پرقانو ن شکنی کے مرتکب پرائیویٹ سکولز کے خلاف فوری کارروائی کی جا سکے جبکہ پرائیویٹ سکولز مالکان کا کہنا ہے کہ فروری میں میٹرک کے بورڈ کے امتحانات شروع ہو رہے ہیں جبکہ پنجاب ایگزامنیشن کمیشن کے تحت ہشتم کے امتحانات بھی قریب ہیں‘ ایسی صورت میں طلباوطالبات کو چھٹیاں نہیں دی جا سکتیں۔اس سلسلے میں محکمہ تعلیم سکولز ملتان کے حکام کا کہنا ہے کہ سی ای او ایجوکیشن آفس کے فون نمبر061-9210035پراطلاع دی جائے‘ فوری ٹیم بھجوا ئی جائے گی‘ کھلا ہونے پر نجی سکول کو سیل کر دیاجائے گا اوررجسٹریشن کینسل کرنے کی کارروائی شروع کی جائے گی۔

انکار

مزید : ملتان صفحہ آخر