پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ پر عملدر آمد کیلئے درخواست دائر

    پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبہ پر عملدر آمد کیلئے درخواست دائر

  



پشاور(نیوزرپورٹر)پاک ایران گیس پائپ لائن منصوبے پرعملدرآمدکے لئے پشاورہائی کورٹ میں ضمنی درخواست دائرکردی گئی ہے جس میں موقف اختیارکیاگیاہے کہ ایران کی جانب سے پاکستان کی سرحدتک پائپ لائن آچکی ہے اورحکومت پاکستان کومعاہدے پرعملدرآمدکرنے کی ہدایت کی جائے تاکہ صارفین کوارزاں نرخوں پرگیس فراہم کی جاسکے سیف اللہ محب کاکاخیل ایڈوکیٹ جانب سے دائرضمنی درخواست میں موقف اختیار کیاگیاہے کہ وزارت گیس وپٹرولیم نے قدرتی گیس صارفین کے لئے گیس بلوں میں سلیب سسٹم کاآغازکیاہے جس کے تحت گیس کے جتنے زیادہ یونٹ خرچ ہوں گے فی یونٹ خرچہ بھی اس کے مطابق بڑھے گادرخواست میں کہاگیاہے کہ اس طرح غریب صارفین پربل کابوجھ بڑھادیاگیاہے لہذاسلیب سسٹم ختم کیاجائے گیس صارفین کے لئے یونٹ کے یکساں نرخ مقررکئے جائیں جبکہ رٹ میں یہ بھی کہاگیاکہ 1995ء میں پاکستان ایران کے مابین گیس منصوبے کاسمجھوتہ ہواہے جس کے تحت ایران پاکستان کے عوام کے لئے سستی گیس فراہم کرے گا اوراس مقصد کے لئے ایران پاکستان کی سرحدتک گیس پائپ لائن لابھی چکاہے جس پرکروڑوں ڈالرکاخرچہ بھی ہوا ہے جبکہ حکومت پاکستان نامعلوم وجوہات کی بناء پراس منصوبے پرعملدرآمد نہیں کررہاہے لہذاحکومت پاکستان کو منصوبے پرعملدرآمدکی ہدایت کی جائے تاکہ صارفین کو سستی گیس فراہم ہوسکے پشاورہائی کورٹ کادورکنی بنچ آئندہ چند روز میں ضمنی درخواست کی سماعت کرے گا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...