مہنگائی اور معاشی بحران کیخلاف عوامی احتجاجی تحریک شروع کرینگے: سینیٹر مشتاق احمد خان

مہنگائی اور معاشی بحران کیخلاف عوامی احتجاجی تحریک شروع کرینگے: سینیٹر ...

  



شیرگڑھ(نامہ نگار)جماعت اسلامی کے صوبائی امیر سینٹر مشتاق احمد خان ایڈوکیٹ نے کہا ہے کہ جماعت اسلامی کے صوبائی شوریٰ کے فیصلے کے مطابق اسمان کی بلندیاں چھونے والی مہنگائی اور بد ترین معاشی بحران کے خلاف جلد بڑی عوامی احتجاجی تحریک شروع کریں گے شوریٰ نے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے سلسلے میں قانون سازی میں مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی کی طرف سے بل کی حمایت پر تنقید کا نشانہ بنایا اور این ار او اور نیب آرڈیننس کو کو پی ٹی ائی حکومت کی منہ میں رام رام اور بغل میں چوری قرار دیا اور اعلیٰ عدلیہ کی طرف سے نظریہ ضرورت کوہمیشہ ہمیشہ کے لئے دفن کرنے اور سابق ڈکٹیٹر پرویز مشرف کو سزائے موت دلانے پر چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ وقار احمدسیٹھ کو شاندار الفاظ میں خراج تحسین پیش کیا اور حکومت پاکستان سے فیصلے پر بلا تا خیر من و عن عمل درآمد کا مطالبہ کیا وزیر اعظم عمران خان نے سیاست کی ڈکشنری میں یوٹرن کی نئی اصطلاح متعارف کرائی ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز دار العلوم مفتاح العلوم شیرگڑھ میں جماعت اسلامی کے صوبائی مجلس شوریٰ کے دو روزہ سالانہ اجلاس کے اختتام پر مقامی میڈیا کے نمائندوں کو پریس بریفنگ دیتے وقت کیا جس میں پورے صوبے سے شوریٰ کے ممبران نے شرکت کی اس موقع پر ان کے ساتھ صوبائی اسمبلی میں جماعت اسلامی کے پارلیمانی لیڈر اور سابق صوبائی وزیرایم پی اے عنایت اللہ خان اور جماعت اسلامی کے صوبائی جنرل سیکرٹری عبد الواسع بھی موجود تھے شیرگڑھ کے مقام پر دار العلوم مفتاح العلوم میں جماعت اسلامی کے صوبائی امیر سینٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ پی ٹی ائی کی مرکزی اور صوبائی حکومت ہر محاذ پر ناکام ہوچکی ہے اسمان کی بلندیاں چھونے والی مہنگائی نے غریب عوام کا جینا دوبھر کریا ہے حکومت نے ایک سال کے دوران پاکستان کی تاریخ کے سب سے زیادہ قرضہ لینے کا ریکارڈ قائم کیا بیرونی آقاوں کی ایماء پر بھارت کے ساتھ کشمیر کا سودا کیا اپنے محسن مہاتیر محمد ترکی کے طیب اردگان اور قطر کے ولی عہد کومایوس کرکے کولا المپور سمٹ میں شرکت نہ کرکے دوست اسلام ممالک کو ناراض کیا مہنگائی اور بے روز گاری میں روزانہ کی بنیاد سے اضافہ ہو رہا ہے حکومت کا مہنگائی اور بے روز گاری پر کنٹرول نہیں ہے آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کو نا اہلی سے بڑا سیاسی مسئلہ بنادیا اس ضمن میں قانون سازی میں جلد بازی سے کام لیا گیا اورڈر ہے کہ توسیع کے ضمن میں میں تین بار نوٹیفیکیشن کی ناکامی کے بعد کہیں قانون سازی بھی اسی طرح سے ناکامی کا سبب بنے پی ٹی ائی کی صوبائی حکومت نے صوبائی حقوق کو اسلام اباد کو فروخت کئے این ایف سی ایوارڈ بجلی رائلٹی اور دیگر صوبائی محاصل کے حصول میں صوبائی حکومت مکمل ناکام ہے حکومت نے قومی اداروں کو مضبوط کرنے کی بجائے اداروں کو آپس میں لڑا کر نا اہلی کا ثبوت دے دیا انہوں نے کہسا کہ جماعت اسلامی نیب آرڈیننس اور آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کے ضمن میں قانون سازی کی بھر پور مخالفت کی ہے اور آئندہ بھی کریگی مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی کہتی کچھ اور کرتی کچھ ہے آرمی ایکٹ کے سلسلے میں قانون سازی کے سلسلے میں پی ٹی ائی کے ساتھ ساز باز کرکے دونوں جماعتوں نے این ار او لیا جبکہ نیب آرڈیننس وزیر اعظٖم پاکستان عمران خان کی طرف سے ڈبل این ار او کی شکل ہے جس سے پی ٹی ائی سرکار مسلم لیگ (ن) اور پیپلز پارٹی کو فائدہ حاصل ہوگا انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی پی ٹی ائی حکومت کی پے درپے ناکامیوں اور نا اہلی پر مزید خاموش نہیں رہ سکتی ہے اور قوم کو مزید نا اہل حکمرانوں کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتی ہے لہذا صوبائی مجلس شوریٰ نے حکومت کی ناکامی اور نا اہلیوں کے خلاف بھر پور عوامی احتجاجی تحریک چلانے کا فیصلہ کیا ہے انہوں نے مزید کہا کہ مولانا فضل الرحمن کے ازادی مارچ اور احتجاجی تحریک میں مسلم لیگ اور پیپلز پارٹی نے ساتھ نہیں دیا مولانا کے ساتھ اپوزیشن جماعتوں نے دھوکہ کیا اس لئے مولانا کی احتجاجی تحریک قوم کو مطلوبہ مقاصد نہ دے سکی انہوں نے کہا کہ جماعت اسلامی نے ہمیشہ اصولوں کی سیاست کی ہے اصولوں کی بنیاد پر اسٹبلشمنٹ کے جمہوریت کے خلاف سازشوں اور منصوبہ بندیوں کے خلاف مزاحمت کی ہے جماعتے اسلامی پر اسٹبلشمنٹ کی بی ٹیم کا الزام لگانے والے خود ڈکٹیٹروں کی پیداوار ہیں

مزید : پشاورصفحہ آخر