غیر ملکی فنڈنگ کیس،سکروٹنی کمیٹی نے تحریک انصاف اور درخواستگزار کے وکلاء 13جنوری کو دوبارہ طلب کرلئے

غیر ملکی فنڈنگ کیس،سکروٹنی کمیٹی نے تحریک انصاف اور درخواستگزار کے وکلاء ...

  



اسلام آباد (این این آئی) الیکشن کمیشن کی جانب سے سیاسی پارٹیوں کی ممنوعہ فنڈنگ کی چھان بین معاملے پر سکروٹنی کمیٹی نے تحریک انصاف کے اور درخواست گزار کے وکلاء کو 13 جنوری کو دوبارہ طلب کر لیا۔ پیر کو پی ٹی آئی کی مبینہ ممنوعہ غیر ملکی فنڈنگ کی تحقیقات کے لیے الیکشن کمیشن کی سکرونٹی کمیٹی کا اجلاس ہوا۔سکروٹنی کمیٹی نے تحریک انصاف کے اور درخواست گزار کے  وکلاء کو 13 جنوری کو دوبارہ طلب کر لیا۔الیکشن کمیشن کے باہر اکبر ایس بابر نے کہاکہ الیکشن کمیشن کی سکروٹنی کمیٹی کی نصف سنچری مکمل ہو چکی ہے،ہماری دعا ہے سکروٹنی کمیٹی کے اجلاسوں کی سنچری مکمل ہونے سے پہلے تحقیقات مکمل ہو جائیں،الیکشن کمیشن کی سکروٹنی کمیٹی 2 سال سے اپنا کام مکمل نہیں کر سکی۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان کا الیکشن کمیشن 1 ماہ سے غیر فعال ہے۔ انہوں نے کہاکہ ان تمام معاملات کی ذمہ دار حکومت ہے،حکومت کی آئینی ذمہ داری ہے کہ الیکشن کمیشن کو مکمل کرے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان تحریک انصاف غیرملکی فنڈنگ کیس کو مینیج کر رہی ہے،پہلے دن سے یہ بھروسہ رہا ہے کہ پاکستان کے آئینی اداروں کے ذریعے انصاف حاصل کرنا ہے۔ انہوں نے کہاکہ اس کیس سے متعلق کچھ ایسے راز ہیں جو بتا دوں تو سیاسی زلزلہ آ جائے گا،سکروٹنی کمیٹی نے ایک ماہ میں کام مکمل کرنا تھا مگر 2 سال سے نہ ہو سکا،ابھی تک تحریک انصاف اپنے اکاونٹس کی تفصیلات ہی جمع نہیں کرا سکی۔ انہوں نے کہاکہ جب ادارے انصاف نہیں دیتے تو اس کا نتیجہ انتشار ہوتا ہے۔

 غیر ملکی فنڈنگ 

مزید : صفحہ آخر


loading...