نارووال سپورٹس سٹی کرپشن کیس، احسن اقبال کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

نارووال سپورٹس سٹی کرپشن کیس، احسن اقبال کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور

  



اسلام آباد(سٹاف رپورٹر) نارووال سپورٹس سٹی سکینڈل مسلم لیگی رہنما و سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کو احتساب عدالت میں پیش کیا گیا کیس کی سماعت کورٹ روم نمبر ایک کے جج محمد بشیر نے کی نیب نے احسن اقبال کے مزید 14 روزہ جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی، نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا احسن اقبال کیخلاف نارووال سپورٹس سٹی کرپشن کیس میں ٹھو س شواہد ہیں، احسن اقبال کے اثاثوں کی بھی چھان بین کررہے ہیں، احسن اقبال کے جسمانی ریمانڈ کی ضرورت ہے۔ نیب پراسیکیوٹر نے اپنے دلائل میں عدالت کو بتایا وائٹ کا لر کرائم میں بااثر ملزمان کو گرفتار نہ کریں تو کوئی تعاون نہیں کرتے۔ سرکاری ادارے بااثر ملزمان سے ڈرتے ہیں ریکارڈ نہیں دیتے جس پر احسن اقبال کے وکیل نے جسمانی ریمانڈ کی مخالفت کی اور عدالت کو بتایا احسن اقبال نیب کو اپنا صفائی کا بیان ریکارڈ کراچکے کوئی برآمدگی ہوئی نا کوئی تفتیش۔احسن اقبال کیس پر نیب ترمیمی آرڈیننس کا اطلاق ہوگا؟احسن اقبال کیس پر نیب ترمیمی آرڈیننس کا اطلاق نہیں ہوگا،احسن اقبال نے عدالت سے استدعا کی نیب ترمیمی آرڈیننس کا فائدہ نہیں لینا چاہتا جن لوگوں کو نوازنے کیلئے نیب ترمیمی آرڈیننس لایا گیا، انہیں ہی فائدہ دیں جس پر نیب پراسیکیوٹر نے عدالت کو بتایا نیب ترمیمی آرڈیننس کا پہلے سے جاری نیب کیسز پر اطلاق نہیں ہوگا، احتساب عدالت نے احسن اقبال کا 7 روزہ جسمانی ریمانڈ منظور کرتے ہوئے حکم دیا کہ تفتیش مکمل کر کے 13 جنوری کو احتساب عدالت میں پیش کیا جائے۔

احسن اقبال ریمانڈ

مزید : صفحہ آخر


loading...