کوہاٹ،خواتین کا گیس بندش کیخلاف باچا خان چوک میں احتجاجی مظاہرہ

کوہاٹ،خواتین کا گیس بندش کیخلاف باچا خان چوک میں احتجاجی مظاہرہ

  



کوھاٹ (بیورو رپورٹ) کوھاٹ کے مختلف علاقوں کی خواتین گیس کی بندش کے خلاف سڑکوں پر نکل آئیں باچا خان چوک میں پرامن احتجاجی مظاہرہ‘ سابق ایم پی اے مسرت شفیع ایڈووکیٹ‘ محمد آصف پراچہ ایڈووکیٹ‘ اسرار شنواری‘ سابق تحصیل لیڈی کونسلر حضرت بیگم کا ایس این جی پی ایل کو الٹی میٹم‘ گیس پریشر بحال نہ کرنے پر کوھاٹ بھر کی سڑکیں بند کرنے کا اعلان‘ تفصیلات کے مطابق کوھاٹ کے درجنوں علاقوں میں گیس لے لو پریشر کے خلاف خواتین بھی سڑکوں پر نکل آئیں اور اپنے حق کے لیے باچاخان چوک میں شدید احتجاج کیا احتجاجی خواتین کی قیادت سابق ایم پی اے مسرت شفیع ایڈووکیٹ‘ سابق تحصیل لیڈی کونسلر حضرت بیگم‘ تاجر ایکشن کمیٹی کے اسرار شنواری اور آصف پراچہ ایڈووکیٹ کر رہے تھے خواتین نے ہاتھوں میں کتبے اٹھا رکھے تھے جن پر گیس حکام کی بے حسی اور گیس کی بلا تعطل فراہمی کے نعرے درج تھے قائدین نے احتجاجی خواتین سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ کوھاٹ گیس کا پیداواری علاقہ ہے مگر یہاں گیس لو پریشر نے عوام خصوصاً خواتین کا جینا محال کر رکھا ہے بچے اور ملازمین صبح بغیر ناشتہ کے گھر سے نکلتے ہیں اور اسی طرح شام کو بھی کھانا پکانا مشکل ہوتا ہے انہوں نے کہا کہ پنجات تو اس گیس سے مستفید ہو رہا ہے گیس حکام لاکھوں روپے تنخواہ اور دیگر مراعات کے مزے لے رہے ہیں مگر کوھاٹ کے علاقے محلہ میاں بادشاہ‘ محلہ پراچگان‘ محلہ شہزادگان‘ بہزادی چکرکوٹ‘ شاہ آباد کالونی‘ جنگل خیل اور کے ڈی اے کے عوام گیس لو پریشر کے مصائب برداشت کر رہے ہیں انہوں نے گیس حکام کو الٹی میٹم دیا اگر فوری طور پر یہ پریشر بحال نہ کیا گیا تو کوھاٹ بھر کی سڑکیں ٹریفک کے لیے بند کر دیں گے جس کی ذمہ داری گیس حکام پر عائد ہو گی اس دوران اے سی محمد ابراہیم موقع پر پہنچے اور احتجاجی خواتین کے ساتھ کامیاب مذاکرات کر کے انہیں پرامن طور پر منتشر کرا دیا۔ 

مزید : صفحہ اول


loading...