کراچی،طارق روڈ پر کسٹمز کے چھاپے کیخلاف تاجروں کا احتجاج

  کراچی،طارق روڈ پر کسٹمز کے چھاپے کیخلاف تاجروں کا احتجاج

  



کراچی (اکنامک  رپورٹر)کسٹمز حکام کے چھاپے کے بعد کراچی کے علاقے طارق روڈ پر دکانداروں نے احتجاج کرتے ہوئے سڑک کو بند کردیا۔کسٹمز حکام نے گزشتہ رات شاپنگ مال میں اسمگل شدہ کپڑے کی موجودگی کی اطلاع پر چھاپا مارا تھا۔طارق روڈ پر کسٹم چھاپے کے بعد دکانداروں نے احتجاج کیا اور کسٹم اہلکاروں کی ایک گاڑی کو روک کر نقصان پہنچایا، چھاپے کے خلاف طارق روڈ کو احتجاجا بند کردیا گیا، کسٹم اہلکار سامان کا کنٹینر بھی چھوڑ کر بھاگ نکلے۔کسٹمز حکام کے مطابق طارق روڈ پر واقع شاپنگ مال میں غیر قانونی اسمگل شدہ کپڑے کی موجودگی کی اطلاع پر چھاپہ مارا تو وہاں سے لاکھوں روپے مالیت کا اسمگل شدہ کپڑا برآمد ہوا۔کپڑے کو 5 سے زائد ٹرکوں میں لوڈ کرنے کے بعد کسٹم ہاوس منتقل کر دیا گیا۔کسٹمز حکام کے مطابق چھاپے کے دوران کپڑے کی اسمگلنگ میں ملوث دکانداروں نے ان کی ٹیم پر حملہ کیا اور کارروائی سے روکنے کی بھی کوشش کی، کسٹم اہلکاروں اور مارکیٹ کے چوکیداروں میں فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا۔دوسری جانب کراچی تاجر اتحاد کے صدر الیاس میمن کا کہنا تھا کہ کسٹمز حکام رات 3 بجے چھاپا مار کر 6 کنٹینرز لے گئے، تالے توڑ کر مال لے جانا صحیح نہیں۔انہوں نے مزید کہا کہ اسمگلنگ کا کپڑا 72 چیک پوسٹوں کے باوجود کیسے کراچی آیا، فی بنڈل پیسے کون وصول کر رہا ہے۔

مزید : صفحہ اول


loading...