جامعہ اردو:مستقل وائس چانسلر نہ ہونے سے مشکلات میں اضافہ

  جامعہ اردو:مستقل وائس چانسلر نہ ہونے سے مشکلات میں اضافہ

  



کراچی (رپورٹ/ اے حبیب خان)وفاقی اردو یونی ورسٹی تین ماہ سے مستقل شیخ الجامعہ کے نہ ہونے کی وجہ سے مشکلات کا شکار۔۔ عدالتی احکامات کے بعد شیخ الجامعہ ڈاکٹر الطاف حسین کے چارج چھوڑنے کے بعد سے یونی ورسٹی میں کوئی شیخ الجامعہ نہیں۔۔ اردو یونی ورسٹی میں جامعہ کے روزمرہ دفتری اموار نمٹانے کے لئے قائم مقام وائس چانسلر کے لیے سینٹ کی جانب سے ڈاکٹر عارف زبیر کا نام منتخب کرکے ایوان صدر بھیجا گیا اور انہیں قائم مقام شیخ الجامعہ تعنیات کرنے کی درخواست کی گئی۔۔ زرائع کے مطابق سینٹ کی جانب سے شیخ الجامعہ کے لئے ڈاکٹر عارف زبیر کے نام کو منظور کرنے کے ساتھ جلد اس حوالے سے نوٹفکشین نکالنے کی یقین دہانی کرائی گئی تاہم نامعلوم وجوہات کے باعث تاحال ابتک نوٹفکیشن جاری نہ ہوسکا۔ زرائع کے مطابق سال دو ہزار انیس کے مہینے اکتوبر و نومبر میں یونی ورسٹی میں نئی کلاسز میں طالب علموں نے داخلیلیے ہوئے ہیں جنکی کلاسز یکم جنوری سے شروع ہونی تھی لیکن وہ شیخ الجامعہ کے نہ ہونے کی وجہ سے ابتک شروع نہ ہوئی جبکہ پچیس اکتوبر سال دو ہزار انیس سے لے کر ابتک یونی ورسٹی کے ریٹائرڈ اساتذہ و اعمال کی پنشن بھی بند ہے جس کی وجہ سے یہ ملاذمین سخت اذیت کا شکار ہیں۔ جامعہ اردو کے ملازمین کے مطابق یونی ورسٹی میں قائم مقام شیخ الجامعہ کے لئے وزرات تعلیم اور ایوان صدر کو فوری اپنا کردار ادا کرتے ہوئے نوٹفکیشن جاری کرنا چاہیے تاکہ ملازمین میں پھیلی بے چینی کا خاتمہ ہوسکے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...