” میں کسی سے بھی نہیں ڈرتی جس نے نوٹس لینا ہے لے لے “ پاک فوج کے نوٹس لینے کے سوال پر حریم شاہ کھل کر بول پڑیں

” میں کسی سے بھی نہیں ڈرتی جس نے نوٹس لینا ہے لے لے “ پاک فوج کے نوٹس لینے کے ...
” میں کسی سے بھی نہیں ڈرتی جس نے نوٹس لینا ہے لے لے “ پاک فوج کے نوٹس لینے کے سوال پر حریم شاہ کھل کر بول پڑیں

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )ٹک ٹاک سٹارز حریم شاہ اور صندل خٹک نے اس وقت ملک کی سیاست میں ہنگامہ برپا کر رکھاہے یہاں تک کہ وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے صحافی مبشر لقمان کو تھپڑ تک دے مارا تاہم اب ٹک ٹاک سٹار کی ایک اور ویڈیو سوشل میڈیا پر وائل ہو گئی ہے جس نے ہر کسی کے ہوش ہی اڑا کر رکھ دیئے ہیں ۔

تفصیلات کے مطابق حریم شاہ آج کل بیرون ملک میں مزے لوٹ رہی ہیں جبکہ انہوں نے کینیڈین شہریت کیلئے درخواست بھی دیدی ہے اور اگر ان کے ٹک ٹاک اکاﺅنٹ کا جائزہ لیا جائے تو وہ دبئی میں سیر سپاٹے کرتی دکھائی دیتی ہیں تاہم اس وقت سوشل میڈیا پر ان کی ایک ویڈیو وائرل ہو رہی ہے جس میں وہ ممکنہ طورپر کسی سوال کا جواب دے رہی ہیں ۔

اس ویڈویو کے حقیقی ہونے سے متعلق کوئی تصدیق یا تردید سامنے نہیں آ سکی ہے ، حریم شاہ اس ویڈیو میں کہتی ہیں کہ ” پاکستان آرمی نے آپ کا نوٹس لے لیاہے “ ، ممکنہ طورپریہ کوئی سوال ہے جسے وہ دہرا رہی ہیں اور ساتھ ہی جواب دیتے ہوئے کہتی ہیں کہ ” جو بھی نوٹس لینا ہے جس نے بھی لینا ہے لے لے ، مجھے کسی کا کوئی ڈر نہیں ہے ۔“

یاد رہے کہ حریم شاہ اور صندل خٹک کی کچھ عرصہ قبل شیخ رشید کے ساتھ ویڈیو کال لیک ہوئی جس نے سیاسی حلقوں میں تہلکہ برپا کر دیا تاہم اس کے بعد ان کی فیاض الحسن چوہان سے ہونے والی گفتگو کی ریکارڈنگ بھی لیک ہوئی جس سے کئی قسم کے سوالات نے جنم لے لیاہے ۔

حریم شاہ اور صندل خٹک نے ٹک ٹاک پر اکاوئنٹ بنایا لیکن ان کو شہرت اس وقت ملی جب ان کی سیاسی شخصیات کے ساتھ ویڈیوز منظر عام پر آئیں اور وہ دفتر خارجہ کے حساس علاقے میں جا پہنچیں جس نے عوام کی توجہ ان کی طرف کر دی ۔

یہ سلسلہ یونہی چلتا رہا تاہم کچھ عرصہ کے بعد ٹویٹر پر شناختی کارڈ اور پاسپورٹ کی فوٹو کاپی وائرل ہوئیں وہ کسی اور کی نہیں بلکہ حریم شاہ اور صندل خٹک کی تھیں جس کے بعد یہ انکشاف ہوا کہ حریم شاہ اپنے لیے یہ فرضی نام استعمال کرتی تھیں جبکہ ان کا حقیقی نام فضاءحسین ہے اور وہ مانسہرہ کے ایک چھوٹے سے گاﺅں سے تعلق رکھتی ہیں ۔

مزید : ڈیلی بائیٹس