آرمی ایکٹ 2020میں قوم کا کیا مفادہے؟ معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے بتادیا

آرمی ایکٹ 2020میں قوم کا کیا مفادہے؟ معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے بتادیا
آرمی ایکٹ 2020میں قوم کا کیا مفادہے؟ معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے بتادیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اپوزیشن جماعتوں کی جانب سے آرمی ایکٹ ترمیمی بل کی حمایت کرنے پر حکمراں جماعت تحریک انصاف کا ردعمل آگیاہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کی معاون خصوصی فردوس عاشق اعوان نے کہا ہے کہ وقت آنے پر تمام سیاسی جماعتیں قومی مفاد کو ترجیح دیتی ہیں۔

انہوں نے ایک سوال کے جواب میں کہا آرمی ایکٹ کا فائدہ یہ ہے کہ اس سے قومی سلامتی کے ذمہ داراداروں کی قیادت سے متعلق غیر یقینی ابہام ختم ہوگئے ہیں۔فردوس عاشق اعوان نے کہاسیاسی معاملات پر اختلافات رائے جمہوریت کا حسن ہے، وقت آنے پر تمام سیاسی جماعتیں قومی مفاد کو ترجیح دیتی ہیں۔سیاسی حریف ایک دوسرے پر تنقید کرتے رہتے ہیں تاہم قومی سلامتی کے معاملات پر تمام سیاسی جماعتیں یکجا ہوجاتی ہیں۔سیاسی جماعتیں اپنا بیانیہ ملکی مفاد پرقربان کردیتی ہیں۔انہوں نے کہاپیپلزپارٹی نے اپنی تمام تجاویز واپس لے کر حب الوطنی کا ثبوت دیا۔سیاسی جماعتیں ملکی مفاد کیلئے سیاسی پلائی ہوئی دیوار بن کر کھڑی ہیں۔

انہوں نے کہاآگے بھی ملکی ترقی و استحکام کے معاملات پر سازگار فضا پیدا کرنے کی کوشش کی جائے گی۔دوہزار بیس ترقی اور خوشحالی اور عام آدمی کا سال ہے۔

ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے فردوس عاشق اعوان نے کہا کہ آرمی ایکٹ کا فائدہ یہ ہے کہ اس سے قومی سلامتی کے ذمہ داراداروں کی قیادت سے متعلق غیر یقینی صورتحال کا خاتمہ ہوا ہے۔

فوجی قیادت کی توسیع و تقرری سے متعلق ابہام ختم ہوئے ہیں،پارلیمنٹ نے ان ابہام کو اور مخالفین کے پراپیگنڈے کو دفن اور ملیا میٹ کردیا ہے۔انہوں نے کہا پارلیمنٹ نے ثبوت دیا ہے کہ وہ اپنی افواج کے پیچھے سیسہ پلائی دیوار بن کرکھڑی ہے۔مخالفین ایف اے ٹی ایف میں ان معاملات کی آڑ میں مخالفت کرنے کی کوشش کررہے ہیں۔ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے کہا احتساب بھی ملکی سلامتی اور قومی مفاد کیلئے ایک ضروری چیز ہے۔

مزید : اہم خبریں /قومی