حریم شاہ نے زرتاج گل کو بھی اخلاقیات سکھا دیں

حریم شاہ نے زرتاج گل کو بھی اخلاقیات سکھا دیں
حریم شاہ نے زرتاج گل کو بھی اخلاقیات سکھا دیں

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن )ٹک ٹاک سٹارز حریم شاہ اور صندل خٹک نے آج کل سوشل میڈیا کے علاوہ پاکستانی سیاست میں بھی کھلبلی مچا رکھی ہے اور اب اس کا تذکرہ تو قومی اسمبلی تک بھی پہنچ گیاہے ۔

تفصیلات کے مطابق کچھ دن قبل صحافی مبشر لقمان نے صحافی رائے ثاقب کھرل کے ہمراہ اپنے یوٹیوب چینل پر ایک ویڈیو شیئر کی جس کا دورانیہ 22 منٹ تھا ، اس ویڈیو میں رائے ثاقب کھرل نے دعویٰ کیا کہ حریم شاہ کے پاس فواد چوہدری کی غیر اخلاقی ویڈیوز ہیں اور کہا کہ ایک خاتون وزیر کی بھی ویڈیو ہے جو کہتی ہیں کہ وزیراعظم بہت ہینڈ سم ہے ۔

رائے ثاقب کھرل نے خاتون وزیر کا نام تو نہیں لیا لیکن وہ اشارہ ایسا دے گئے بات بہت آگے نکل گئی تاہم اسی ویڈیو کے باعث فواد چوہدری نے مبشر لقمان کو شادی کی تقریب میں تھپڑ بھی مارے اور اب پی ٹی آئی کی خاتون وزیر زرتاج گل نے یہ معاملہ قومی اسمبلی میں بھی اٹھا دیاہے جس کے بعد ان کے بیان پر سوشل میڈیا میں نئی بحث شروع ہو گئی ہے اور صارفین ان پر ٹوٹ پڑے ہیں ۔

ویڈیو دیکھیں:

زرتاج گل کے قومی اسمبلی میں کیے گئے خطاب کے ساتھ ایک اور کلپ سوشل میڈیا پر وائرل ہو رہاہے جس میں وہ نام لیے بغیر مریم نواز کو تنقید کا نشانہ بنارہی ہیں اور نہایت نامناسب انداز میں انہیں ’ بھگوڑی ‘ قرار دیتی دکھائی دے رہی ہیں ۔وزیر مملکت برائے موسمیاتی تبدیلی زرتاج گل نے قومی اسمبلی میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بغیر ثبوت کے کسی پر الزام نہیں لگانا چاہیے، عزت سب کی برابر ہے،خواتین بھی الیکشن لڑ کر آتی ہیں۔انہوں نے ن لیگ پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ یہ تو خودعورتوں کا گالیاں دیتے ہیں،کیا آپ بھول جاتے ہیں کہ ہم بھی کسی کی مائیں ،بہنیں ہیں ، میری بہن آسٹریلیا سے مجھ سے پوچھ رہی ہے کہ یہ ویڈیو والا معاملہ کیا ہے۔

اس معاملے کے بعد زرتاج گل کے ماضی میں مریم نواز کے بارے میں دیئے گئے بیانا ت کی ویڈیوز بھی وائرل ہو رہی ہیں جس پر صارفین تبصرہ کرتے ہوئے اسے مکافات عمل قرار دے رہے ہیں اور خاتون وزیر کو شدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہاہے۔

رومان خان نامی صارف نے سوشل میڈیا پر وائرل ویڈیو کوشیئر کیا اور ساتھ لکھا کہ ’’کل تک زرتاج گل کسی کی ماں بہن بیٹی نہیں تھی اس لیے دوسروں کی بیٹیوں کی پگڑیاں ہنس ہنس کر اچھال رہی تھی۔۔۔۔ اب جب اس کا اپنا ذکر چھیڑ گیا تو محترمہ کو انسانیت یاد آگئی ۔۔۔ اپنی بہن بیٹی بھی یاد آگئی "جو بویا وہ کاٹنے کا وقت ہوا چاہتا ہے۔‘‘

احمد نامی صارف نے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے اس کلپ کو شیئر کیا اور لکھا کہ ” زرتاج گل ، کیا کسی کی بیٹی کے بارے میں ایسے بات کی جاتی ہے ؟ ۔“

راشد کاضی نامی ٹویٹر صارف نے زرتاج گل کا نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کا کلپ شیئر کیا اور الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ ” زرتاج گل آپ نے ٹھک کہا ، عزت سے بڑھ کر کچھ نہیں ہوتا لیکن جب تحریک انصاف کاس وشل میڈیا مریم نواز اور بختاور بھٹو کے خلاف بے ہودہ ٹرینڈ چلاتا رہا اور آپ بھی ان میں حصہ لیتی رہیں ، تب کیا مریم نواز اور بختاور کی عزت نہیں تھی ؟ کیا وہ عورتیں نہیں تھیں ، کسی کی بیٹیاں ، بہنیں نہیں تھیں۔“

کچھ صارفین کی جانب سے اسے مکافات عمل قرار دیا جارہاہے ۔حسن بلال نامی صارف کاکہناتھا کہ ” مکافات عمل شروع ہو چکا ہے ، زرتاج گل صاحبہ ،“۔

اسد ملک نے کہا کہ ” آگے آگے دیکھے ہوتا ہے کیا ، ابھی تو شروعات ہے ، مکافات عمل اسی کو کہتے ہیں ۔

شہزاد اقبال نامی صارف نے یہی ویڈیو کلپ شیئر کیا جو کہ بظاہر تصویر سے ن لیگی کارکن معلوم ہوتے ہیں ، نے کہا کہ ” چند دن پہلے زرتاج گل مریم نواز کو بھگوڑی کہہ رہی تھیں ، اللہ نے بہت جلد آئنہ دکھا دیا ہے ۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس