سپریم کورٹ ،نیب ملزم کی درخواست ضمانت واپس لینے پر خارج

سپریم کورٹ ،نیب ملزم کی درخواست ضمانت واپس لینے پر خارج
سپریم کورٹ ،نیب ملزم کی درخواست ضمانت واپس لینے پر خارج

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے نیب ملزم کامران قریشی کی درخواست ضمانت واپس لینے پر خارج کردی،جسٹس مشیرعالم نے ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ نیب ملزم کی گرفتاری کے بعد گواہیاں اور ثبوت ڈھونڈتا رہتا ہے،نیب ساری کارروائی اور تحقیقات مکمل کرکے گرفتار کیوں نہیں کرتا؟

تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں نیب ملزم فیصل کامران قریشی کی درخواست پر سماعت ہوئی،جسٹس مشیر عالم نے کہاکہ نیب ملزم کی گرفتاری کے بعد گواہیاں اور ثبوت ڈھونڈتا رہتا ہے،نیب ساری کارروائی اور تحقیقات مکمل کرکے گرفتار کیوں نہیں کرتا؟کسی کو پھانسی لگانا ہے لگا دیں،کسی کو سزا دینا ہے دے دیں،نیب انکوائری اور تحقیقات کے معاملات میں جلدی کیوں نہیں کرتا؟۔وکیل نیب عمران الحق نے کہا کہ ملزمان کی گرفتاری ریکارڈ میں ٹیمپرنگ کے خدشہ کے پیش نظرکی جاتی ہے،ملزم فیصل کامران نے سٹاک ایکسچینج میں سرمایہ کاری کے نام پر لوگوں کیساتھ فراڈ کیا، عدالت نے ملزم کے وکیل کی جانب سے درخواست ضمانت واپس لینے پرخارج کردی۔

مزید : قومی /علاقائی /اسلام آباد


loading...