ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی نمازجنازہ میں بھگدڑ، درجنوں افراد جاں بحق

ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی نمازجنازہ میں بھگدڑ، درجنوں افراد جاں بحق
ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی نمازجنازہ میں بھگدڑ، درجنوں افراد جاں بحق

  



کرمان(ڈیلی پاکستان آن لائن)امریکی ڈرون حملے میں جاں بحق ہونے والے ایرانی جنرل قاسم سلیمانی کی نماز جنازہ کے دوران بھگدڑ مچنے سے 35افراد جاں بحق جبکہ پچاس کے قریب زخمی ہوگئے۔ یہ بھگدڑ منگل کو قاسم سلیمانی کے آبائی شہر کرمان میں ان کے جنازے میں مچی جس میں بہت بڑی تعداد میں لوگ شریک تھے۔

قاسم سلیمانی کی نماز جنازہ مختلف مقامات پر اداکی  گئی ہے تاہم تدفین سے قبل ان کی آخری نماز صوبہ کرمان میں ان کے آبائی گاوں اداکی جارہی تھی جہاں لاکھوں افراد جمع تھے تاہم غیر ملکی میڈیا کے مطابق اچانک وہاں بھگدڑ مچ گئی اور اس دوران تین درجن کے قریب افراد جاں بحق جبکہ 48زخمی ہوگئے۔امریکی میڈیا نے ایرانی سرکاری ٹی وی کے حوالے سے بتایا ہے کہ بھگدڑ اس وقت مچی جب جنازہ جاری تھا۔

اس سے قبل ان کی نماز جنازہ تہران میں اداکی گئی تھی جہاں دس لاکھ سے زیادہ لوگوں نے شرکت کی تھی۔

واضح رہے کہ قاسم سلیمانی کو ایران میں ایک قومی ہیرو کا درجہ حاصل تھا اور انھیں ملک میں آیت اللہ خامنہ ای کے بعد سب سے طاقتور شخصیت سمجھا جاتا تھا۔ وہ جمعہ کو بغداد مٰیں ایک امریکی ڈرون حملے میں جاں بحق ہوگئے تھے جس کے بعد سے مشرق وسطیٰ میں کشیدگی اپنے عروج پر ہے۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /بین الاقوامی /عرب دنیا


loading...