بھارتی فلم ’’مام‘‘میں عدنان صدیقی کا سری دیوی کے شوہر کے طور پر انتخاب کس نے کیا ؟فلم کے ڈائریکٹر نے ایسا انکشاف کر دیا کہ سب ہی حیران رہ گئے

بھارتی فلم ’’مام‘‘میں عدنان صدیقی کا سری دیوی کے شوہر کے طور پر انتخاب کس ...
بھارتی فلم ’’مام‘‘میں عدنان صدیقی کا سری دیوی کے شوہر کے طور پر انتخاب کس نے کیا ؟فلم کے ڈائریکٹر نے ایسا انکشاف کر دیا کہ سب ہی حیران رہ گئے

  

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارت کی معروف اداکارہ سری دیوی اور پاکستانی ڈارموں کی معروف جوڑی عدنان صدیقی اور سجل علی کی پہلی بالی ووڈ فلم ’’مام ‘‘ بھارت اور پاکستان سمیت دنیا میں آج ریلیز ہو رہی ہے ،ایسے میں فلم ڈائریکٹر روی ادھے وار نے انکشاف کیا ہے کہ فلم میں سری دیوی کے شوہر کے لئے پاکستانی اداکار عدنان صدیقی کے نام کا انتخاب اور مشورہ سری دیوی کی بیٹی جھانوی کپور نے دیا تھا ۔

بھارتی نجی ٹی وی چینل ’’این ڈی ٹی وی ‘‘ کے مطابق بالی ووڈ میں اپنی پہلی فلم کے ذریعے انٹری ڈالنے والے اور  آج ریلیز ہونے والی فلم ’’مام ‘‘ کے ڈائریکٹر روی ادھے وار کا کہنا تھا کہ فلم بنانے کے لئے جب ہم فنکاروں کے ناموں کا انتخاب کر رہے تھے اور سری دیوی کے شوہر اور ایک بیٹی کے باپ کا کردار ڈھونڈ رہے تھے تو ایسے میں جھانوی کپور نے مشورہ دیتے ہوئے کہا کہ اس نے عدنان صدیقی نام کے ایک پاکستانی اداکار کو دیکھا ہے جو فلم کی اس کہانی میں بڑا فٹ بیٹھیں گے ،سری دیوی کی بیٹی کا کہنا تھا کہ اس نے عدنان صدیقی نے ہالی ووڈ اداکارہ انجلینا جولی کے ساتھ ایک فلم میں بھی کام کیا ہے ۔روی کا کہنا تھا کہ عدنان کی انجلینا کے ساتھ وہ فلم میں نے بھی دیکھی تھی ،اس لئے میں نے عدنان صدیقی سے ’’مام ‘‘ میں کام کرنے کے لئے رابط کیا اور فلم کی کہانی پر تفصیلی گفتگو کے بعد انہیں اس فلم میں شامل کر لیا ۔اس فلم میں پاکستانی ڈراموں کی معروف اداکارہ سجل علی بھی شامل ہیں جو سری دیوی کی بیٹی کا کردار اداکر رہی ہیں ۔پاکستانی اداکاروں عدنان صدیقی اور سجل علی کے فلم ’’مام ‘‘ میں کردار اور کام کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے روی کا کہنا تھا کہ عدنا ن اور سجل کے ساتھ کام کرنا بڑا ہی دلچسپ تجربہ رہا ،دونوں پاکستانی فنکاروں نے اس فلم میں بہت اچھا کام کیا ہے اور یہ حقیقت ہے کہ دونوں ہی بہترین آرٹسٹ ہیں ،مجھے سری دیوی کے شوہر اور بیٹی کے کردار کے لئے اسی طرح کے کسی فنکار جوڑی کی تلاش تھی جو مکالموں سے زیادہ ایکسپریشنز یعنی تاثرات دینے میں بے مثال ہو۔ سجل کی آنکھوں کی چمک اور ایکسپریشن نے مجھے ان کی جانب راغب کیاجبکہ اس کے ساتھ ان کی پرفارمنس تو ہے ہی لاجواب۔

روی کا کہنا تھا کہ فلم ’’مام ‘‘ بنانے کے پیچھے خیال ماں اور بیٹی کے رشتے کی تلاش اور اس رشتے میں پیدا ہونے والی پیچدگیوں کو اجاگر کرنا تھا ،میں واقعی تعلقات کی پیچیدگیوں سے محبت کرتا ہوں، جہاں چیزیں بولتی نہیں، لیکن آپ کو اس کے مسائل کو محسوس کر سکتے ہیں، میں نے فلم میں اس سوال کا جواب دینے کی کوشش کی ہے کہ ایک ماں ہونے کا مطلب کیا ہے؟ یہ ایک غیر حقیقی کہانی لیکن آج کے حالات کے عین مطابق ہے ۔واضح رہے کہ فلم ’’مام ‘‘آج پاکستان اور بھارت سمیت دنیا بھر میں ریلیز ہو رہی ہے ،اس فلم میں سری دیوی ،عدنان صدیقی ،سجل علی کے علاوہ نواز الدین صدیقی اور اکشے کھنہ بھی شامل ہیں ۔

مزید :

تفریح -