کسٹمز ایکسپورٹ نے بقاجات کی وصولی کیلئے نوٹس جاری کر دیئے

کسٹمز ایکسپورٹ نے بقاجات کی وصولی کیلئے نوٹس جاری کر دیئے

  

کراچی (اکنامک رپورٹر) ماڈل کسٹمز ایکسپورٹ کی جانب سے بقاجات کی وصولی کے لیئے کارروائیاں جاری ہیں، گزشتہ ماہ جون کے مہینے میں وصولی کے لیئے 6حتمی نوٹس جبکہ 5سے زائد شو کاز جاری کیئے گئے، حتمی نوٹسز میں سے 3کے جواب آنے پر وصولیاں کی گئیں جبکہ ، 5شوکاز نوٹسز میں سے جواب نہ دینے والی 3کمپنیوں کو حتمی نوٹسز کا اجراء کیا گیا، دوسری جانب ماڈل کسٹمز ایکسپورٹ کی جانب سے گزشتہ ماہ جون کے مہینے میں بھیجے گئے حتمی نوٹس کے جواب میں کراچی میں قائم دو نجی کمپنیوں سے بقایاجات کی مد میں مجموعی طور پر ساڑھے 6لاکھ روپے کی وصولیاں کر لی گئی ہیں، جبکہ میر پور خاص کے علاقے گوشت گلی میں قائم ایک کمپنی کو بقایاجات کی وصولی کے لیئے شوکاز نوٹس جاری کیا گیا ہے۔ذرائع ماڈل کسٹمز ایکسپورٹ کے مطابق جون میں مختلف ٹیکسز اور سرچارجز کی وصولی کے لیئے کراچی سے تعلق رکھنی والی ایک کمپنی آریان انٹر پرائزز کوحتمی نوٹس ارسال کیا گیا تھا،جس میں کہا گیا تھا مختلف ٹیکسز کی مد میں بقایاجات ہر صورت 7یوم میں ادا کر دیئے جائیں۔

، حتمی نوٹس کے جواب میںآ بچائے گئے تھے، کمپنی کی جانب سے بقایاجات کی مد میں رقم کی ادائیگی کر دی گئی ، دوسری جانب کراچی کے علاقیسائٹ ایریا میں قائم ایک نجی کمپنی ریان انٹر پرائزز کی جانب سے جواب داخل کیا گیا تھا، جس میں کہا گیا تھا ،آریان انٹر پرائزز کی جانب سے جون کے پہلے ہفتے میں اسٹیل کراکری کے 2 کنسائیمنٹس کی کلیئرنس کرائی گئی تھی جس میں پی سی ٹی کا غلط استعمال کیا گیا تھا، اور اس مد میں 3لاکھ50ہزار روپے کے ڈیوٹی ٹیکسزشفیق ہنڈی کرافٹ اینڈ ایکسپورٹ کی جانب سے بھی بقایات کی مد میں 2لاکھ 50ہزار روپے کی رقم جمع کرادی گئی،کمپنی شفیق ہینڈی کرافٹ کوجون میں بقایاجات جمع کرانے کے لیئے حتمی نوٹس بھیجا گیا تھا،مذکورہ کمپنی پر الزام تھا کہ کمپنی نے لکڑی کے ہنڈی کرافٹ کے ایک کنسائیمنٹس کی کلیئرنس کی مد میں ایس آر او 566کا غلط استعمال کیا گیا تھا، جس کی مد میں ٹیکسز اور سرچارجز کی مد میں ڈاھئی لاکھ روپے کی رقم بچائی گئی تھی، مذکورہ کمپنی کو حتمی نوٹس میں کہا گیا تھا کہ مذکورہ رقم 7یوم میں ادا کر دی جائے، ماڈل کسٹمز ایکسپورٹ کی جانب سے میر پور خاص کے علاقے کوشت گلی میں قائم ایک کمپنی ایوب گارمنٹس کو شو کاز نوٹس کا اجراء4 کیا گیا ہے، مزکورہ کمپنی پر الزام تھا کہ اس نے ایک ماہ قبل نیٹ ملبوسات کی کنسائیمنٹس پر ڈیوٹی و ٹیکسز غلط طریقے سے بچائے ،ایوب گارمنٹس کی کلیئر کرائی گئیں کنسائیمنٹس کی جانچ پڑتال کا عمل جاری تھا، جس پر ماڈل کسٹمز ایکسپورٹ کی جانب سے مزکورہ کمپنی کو1لاکھ سے زائد کی ادائیگی کے لیئے شو کاز نوٹس بھیجا گیا ہے، جس میں رقم جمع کرانے کے لیئے 7یوم کا وقت دیا گیا ہے۔

مزید :

کامرس -