ڈالر کی قیمت میں 3.50روپے کمی ، اضافہ مصنوعی تھا ، معاملے کی تحقیقات کرینگے : اسحاق ڈار

ڈالر کی قیمت میں 3.50روپے کمی ، اضافہ مصنوعی تھا ، معاملے کی تحقیقات کرینگے : ...

  

اسلام آباد(اے این این) وفاقی وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ ڈالر کی قدر میں اضافہ مصنوعی تھا،معاملے کی مکمل تحقیقات کرینگے،ڈالر کا بحران چند افراد کے درمیان رابطے کے فقدان کے باعث ہوا، ہم دیکھیں گے بحران سے فائدہ کس نے اٹھایا اور نقصان کس کا ہوا،وزیر اعظم کی وطن واپسی پر سٹیٹ بنک کے مستقل گورنر کا تقرر کر دیا جائے گا۔ان خیالات کا اظہا ر انھوں نے ڈالر کے حالیہ بحران سے متعلق اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ اسحاق ڈار کا کہنا تھا کہ ڈالر کی قدر میں 3 روپے اضافہ حیران کن تھا اور مجھے اس اضافے کی کوئی وجہ نظر نہیں آئی،چند ہی گھنٹوں کے دوران ڈالر کی قیمت میں ساڑھے 3 روپے تک اتار چڑھاؤ آیا ، مجھے لگا کہ شاید سیاسی حالات کے باعث ڈالر کی قدر میں اضافہ ہوا۔ ڈالر کی قدر میں اضافہ چند افراد کے درمیان رابطے کے فقدان کے باعث ہوا، ہم اس معاملے کی مکمل تحقیقات کرینگے۔ انٹر بینک میں کاروبار میں ہونے والا یہ ردوبدل مصنوعی تھا۔ جیسے ہی اجلاس کا آغاز ہوا تو ڈالر کی قیمت میں چند گھنٹوں کے دوران ہی 3 روپے 50 پیسے کی واضح کمی نظر آئی۔ ڈالرکی قیمت میں اتار چڑھاؤ مصنوعی عمل ہے ،مارکیٹ نے اپنی قدر کا تعین خود کرنا ہے۔ حکومت بینکنگ کے شعبے کو درپیش مسائل کے حل کے لیے پرعزم ہے انہوں نے واضح کیا کہ حکومت کی کوئی ایسی پالیسی نہیں جس کی مدد سے مصنوعی طریقے سے ڈالر کی قیمت میں ردوبدل کیا جائے۔ سٹاک ایکسچینج مارکیٹ مستحکم ہے روپے کی قدر میں کمی کے حوالے سے پورٹ آنے پر ہی تفصیلی تجزیہ کیا جائے گا۔اس سے قبل اسحق ڈار کی صدارت میں ہونے والے اجلاس میں سیکرٹری خزانہ ، چیئرمین ایف بی آر ، اسٹیٹ بنک کے اعلیٰ حکام اور کمرشل بنکوں کے سربراہوں نے شرکت کی ۔اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ڈالر کی قیمت مزید کم کی جائے اور روپے کی قدر کو مستحکم رکھا جائے گا۔اجلاس میں ڈالر کی قیمت میں اچانک اضافے کے معاملے کی تحقیقات کا بھی فیصلہ کیا گیا ۔انٹربینک مارکیٹ میں ٹریڈنگ کے دوران ڈالر کی قیمت میں 3 روپے 50 پیسے کی کمی دیکھنے میں آئی جس کے بعد ڈالر کی قیمت 105 روپے تک پہنچ گئی۔ماضی میں بھی کمرشل بینکوں کی جانب سے کی جانے والی ٹریڈنگ کی وجہ سے روپے کی قیمت میں نمایاں کمی دیکھنے میں آئی تھی۔ماہرین کے مطابق پاکستان میں ڈالر کی قیمت میں اضافے کی وجہ سے بیرون ملک قرضوں کی ادائیگی میں ملک کو مشکلات کا سامنا ہو سکتا ہے۔

اسحاق ڈار

مزید :

صفحہ اول -