حسین نواز قطری شہزادے سے ملاقا ت کیلئے وزیر اعظم کا پیغام لے کردوحہ روانہ

حسین نواز قطری شہزادے سے ملاقا ت کیلئے وزیر اعظم کا پیغام لے کردوحہ روانہ

اسلام آباد (آن لائن) پانامہ کیس کی تحقیقات ،ایڈیشنل ڈی جی ایف آئی اے واجد ضیاء کی سربراہی میں جے آئی ٹی کا 56 واں اجلاس جمعرات کے روز بھی جاری رہا۔حسین نوازقطری شہزادے سے ملاقات کیلئے اچانک دوحہ روانہ ہوگئے ۔چینی وفد مختلف سرکاری اداروں کا دورہ کرتے ہوئے سخت سکیورٹی میں جوڈیشل اکیڈمی بھی پہنچ گیا۔ ذرائع کے مطابق اجلاس میں جے آئی ٹی کے ارکان نے شریف خاندان کے افراد کے ریکارڈ کئے گئے بیانات پر غور کیا جبکہ مزید بیان ریکارڈ کرنے سے متعلق مشاورت بھی کی گئی۔ جے آئی ٹی نے 10 جولائی کو حتمی رپورٹ سپریم کورٹ میں جمع کروانی ہے جس کیلئے تمام نکات کو حتمی شکل دی گئی اور دستاویزات کا جائزہ لیا گیا۔ دوسری جانب چین کی وزارت قانون کے پاکستان کے دورہ پر آئے وفد نے بھی جوڈیشل اکیڈمی کا دورہ کیا۔ وفد میں چینی سفیر بھی شامل تھے۔ذرائع کا کہنا ہے کہ چینی وفد اس سے قبل مختلف سرکاری اداروں کا بھی دورہ کر چکا ہے۔ وفد کو سخت سکیورٹی میں جوڈیشل اکیڈمی پہنچایا گیا۔ جوڈیشل اکیڈمی کے باہر سڑکیں تاحال بند ہونے کی وجہ سے راہگیروں اور گاڑی چلانے والوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑا۔ دوسری جانب وزیر اعظم نوازشریف کے بڑے صاحبزادے حسین نواز قطر روانہ ہو گئے جہاں وہ ممکنہ طور پر شیخ حمد بن جاسم سے ملاقات کریں گے۔ حسین نواز قطر ایئر لائنز کی پرواز کیو آر 615کے ذریعے اسلام آباد سے دوحہ روانہ ہوئے ہیں۔ذرائع کا کہنا ہے کہ حسین نواز قطر میں شہزادے حمد بن جاسم سے ملاقات کریں گے اورمنی ٹریل کے حوالے سے سپریم کورٹ میں پیش کردہ قطری خط پر جے آئی ٹی کو ممکنہ بیان پر تبادلہ خیال کریں گے۔حسین نواز دوحہ میں قطری شہزادے حمد بن جاسم سے ملاقات میں وزیر اعظم نواز شریف کا خصوصی پیغام پہنچائیں گے ۔واضھ رہے کہ جے آئی ٹی نے پاناما لیکس کے حوالے سے شریف خاندان کی جانب سے پیش کردہ خط پر قطری شہزادے حمد بن جاسم کو بیان ریکارڈ کرانے کیلئے پاکستان آنے کی ہدایت کی تھی مگر انہوں نے انکار کر دیا جس کے بعد جے آئی ٹی کی جانب سے انہیں دوحہ میں پاکستانی سفارتخانے میں آکر بیان دینے کی پیشکش کی گئی مگر انہوں نے اس پر بھی حامی نہیں بھری۔

مزید : کراچی صفحہ اول