تورڈھیر شہر میں شیڈول سے ہٹ کر لوڈشیڈنگ میں چھوٹ دینے کا مطالبہ

تورڈھیر شہر میں شیڈول سے ہٹ کر لوڈشیڈنگ میں چھوٹ دینے کا مطالبہ

  

تورڈھیر(نمائندہ خصوصی) تورڈھیرشہر پر شیڈول کی لوڈشیڈنگ میں چھوٹ دینے کامطالبہ، مانکی فیڈر پر جاری کام کے سلسلے میں روزانہ صبح سے عصرتک 6 تا8 گھنٹے مسلسل ویسے بھی بجلی کی سپلائی منقطع رکھی جاتی ہے، علاوہ ازیں ساری رات وقفہ وقفہ سے شیڈول کی لوڈشیڈنگ کرکے واپڈاصارفین کے صبرکامزید امتحان نہ لیا جائے ۔ان خیالات کااظہار نائبرہوڈ کونسل تورڈھیر2 کے ناظم محمد کامران نے میاں عیسیٰ لارمیں نصب ٹرانسفارمر اچانک جل جانے پر ڈیڑھ گھنٹہ کے اندر 25 کے بجائے 50-KVA ٹرانسفارمرکی فوری فراہمی اورتنصیب کے موقع پر میڈیاسے گفتگو میں کیاہے انکا کہنا تھا کہ تحصیل لاہورکے نواحی شہرتورڈھیر پر شیڈول کی لوڈشیڈنگ کا دورانیہ 6 گھنٹے ہے جبکہ مانکی فیڈر پر جاری کام کے سلسلے میں اضافی بجلی بندش کے دورانیہ سمیت 12گھنٹے سے متجاوز بن جاتاہے جو شدیدگرمی کے اس موسم میں تورڈھیرکے واپڈاصارفین کیساتھ سراسر ظلم ہے چاہیے تو یہ تھا کہ کام کے سلسلے میں ہنگامی بجلی بندش کا دورانیہ شیڈول کادورانیہ ہی سمجھاجاتااوراضافی لوڈشیڈنگ سے اجتناب کرتے ہوئے عوام الناس کو مزید تنگ نہ کیا جاتا انکامزید کہنا تھاکہ گاؤں مانکی کے فیڈر پر جاری کام کے سلسلے میں تورڈھیرمیں مین روڈ پر نصب بجلی کے ہیوی پولز پر تاریں کھینچی جارہی ہیں جس کیلئے ناگہانی حادثہ کے پیش نظر چونکہ روزانہ دن کے وقت صبح تاعصر ویسے بھی سپلائی بند رکھی جاتی ہے جس سے یہاں کے لوگوں کے روزمرہ معمولات تو شدیدمتاثر ہیں ہی جبکہ ا وپرسے رات کے اوقات میں مزیدشیڈول کی لوڈشیڈنگ کرکے گویا ان سے آرام کاحق بھی چھینا جارہا ہے اسلئے انہوں نے واپڈاکے حکام سے پرزورمطالبہ کرتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک مانکی فیڈر پرکام کا یہی سلسلہ جاری ہے توتورڈھیرشہر کو شیڈول کی لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ قرار دیا جائے تاکہ سارادن گرمی اورحبس کے ستائے عوام رات کے اوقات میں توکم ازکم سکھ اورسکون کیساتھ آرام کرسکے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -