عدالت عالیہ کا ڈی ایچ او قاضی عبداللہ کے اختیارات میں مداخلت بند کرنیکا حکم

عدالت عالیہ کا ڈی ایچ او قاضی عبداللہ کے اختیارات میں مداخلت بند کرنیکا حکم

ملتان(وقائع نگار، خبر نگار خصوصی)لاہور ہائی کورٹ ملتان بنچ نے محکمہ صحت کو حکم دیا ہے کہ ڈسٹرکٹ آفیسر ہیلتھ(ہیومن ریسورس مینجمنٹ) ڈاکٹر قاضی عبداللہ کے اختیارات میں مداخلت بند کی جائے۔لا ہور ہائیکورٹ ملتان بینچ نے ڈسٹرکٹ آفیسرہیلتھ ایچ آر ایم ملتان کو سروس ٹربیونل کے احکامات کے باوجودفرائض کی انجام دہی میں مداخلت کرنے کے خلاف درخواست پرموجودہ(بقیہ نمبر21صفحہ12پر )

صورتحال برقراررکھنے اورلاء آفیسرومحکمہ صحت ملتان کے حکام کو13 جون کو پیش ہونے کاحکم دیاہے۔فاضل عدالت میں ڈسٹرکٹ آفیسرہیلتھ ایچ آر ایم ملتان ڈاکٹر عبداللہ قاضی نے درخواست دائر کی تھی کہ درخواست گذارکوجعلی تقرریوں کی انکوائری میں ایک ہیلتھ آفیسر کو قصوروار قراردینے کی رنجش پر مذکورہ افسرنے اپنے اثر و رسوخ کااستعمال کرتے ہو ئے لاہور سیکرٹریٹ تبادلہ کرا دیا تھااور خود 18 ویں گریڈ میں ر ہتے ہو ئے ان کی سیٹ کا بھی چارج لے لیاجس کے خلاف سروس ٹربیونل سے رجوع کیاتو درخواست گذار نے چارج نہ چھوڑنے پرموجودہ صورتحال برقراررکھنے اورمداخلت نہیں کرنے کا حکم دیاگیا تھا لیکن ان کے اختیارات میں مسلسل مداخلت کی جارہی ہے اورکام کرنے کی اجازت نہ دینے کے ساتھ مراعات بھی نہیں دی جارہی ہیں اورنہ ہی ٹربیونل کے حکم پر بھی عمل کیا جارہاہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر