پولیس کا مبینہ ناروا سلوک‘ رکشہ ڈرائیور دلبرداشتہ ہو کر ٹرین کے سامنے آگیا

پولیس کا مبینہ ناروا سلوک‘ رکشہ ڈرائیور دلبرداشتہ ہو کر ٹرین کے سامنے آگیا

ملتان(کرائم رپورٹر) پولیس کے مبینہ ناروا سلوک سے دلبرداشتہ شخص نے ٹرین کے سامنے آکر خود کشی کرلی سیتل ماڑی پولیس نے الزامات بے بنیاد قرار دے دیے۔معلوم ہوا ہے (بقیہ نمبر28صفحہ7پر )

کہ گزشتہ روز سیتل ماڑی کے علاقہ کا رہائشی ظفر نامی شخص نے ٹرین کے سامنے آکر خودکشی کرلی،اطلاع ملنے پر پولیس موقع پر پہنچ گئی اور لاش ورثا کا حوالے کردی۔دوسری جانب اہل خانہ نے پیراں غائب روڈ پر لاش رکھ کر احتجاجی مظاہرہ،اس دوران اہل خانہ کا کہنا تھا کہ ظفر رکشہ ڈرائیور تھا، سیتل ماڑی پولیس نے ظفر کے خلاف چوری کا جھوٹے مقدمہ در ج کیا اور اسے روز حراساں کرتی رہی۔ظفر نے جھوٹے مقدمہ سے دلبراداشتہ ہوکر انتہائی اقدام اٹھایا۔سیتل ماڑی پولیس کا کہنا ہے کہ ظفر کے خلاف کوئی مقدمہ درج نہیں کیا گیااس کا اپنی بیوی سے جھگڑا رہتا تھا،جس سے دلبرداشتہ ہو کر اس نے خود کشی کی۔

خودکشی

مزید : ملتان صفحہ آخر