’بیان ریکارڈ کرنا ہے تو گھر آجائیں“، حمد بن جاسم کا جے آئی ٹی کو خط کا جواب

’بیان ریکارڈ کرنا ہے تو گھر آجائیں“، حمد بن جاسم کا جے آئی ٹی کو خط کا جواب
’بیان ریکارڈ کرنا ہے تو گھر آجائیں“، حمد بن جاسم کا جے آئی ٹی کو خط کا جواب

  


دوحہ (ڈیلی پاکستان آن لائن ) قطری شہزادے حمد بن جاسم نے جے آئی ٹی کے آخری خط کا جواب دیدیا ۔انہوں نے سپریم کورٹ اور جے آئی ٹی کے دائرہ اختیار کو تسلم کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیان ریکارڈ کرنا ہے تو گھر آجائیں۔

ایکسپریس نیوز کے مطابق قطری شہزادے نے جے آئی ٹی کو اپنا جوابی خط بھیج دیا ہے جس میں انہوں نے سفارتخانے آکر بیان ریکارڈ کرانے سے انکار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بیان ریکارڈ کرنا ہے تو گھر آجائیں۔

مزید خبریں پڑھیں،آپ سے خطوط کی تصدیق نہیں تحقیقات بھی کرنی ہیں: جے آئی ٹی نے حمد بن جاسم کو ایک اور خط لکھ دیا

حمد بن جاسم نے اپنے جوابی خط میں جے آئی ٹی کو بیان ریکارڈ کرنے کیلئے اپنے دفتر یا گھر آنے کی پیشکش کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ میں پاکستان کا شہری نہیں ہوں اور نہ ہی مجھ پر پاکستانی قوانین کا اطلاق ہوتا ہے۔

مزید : قومی /اہم خبریں