اداروں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے والے نہال ہاشمی نے عدالت سے غیر مشروط معافی مانگ لی

اداروں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے والے نہال ہاشمی نے عدالت سے غیر مشروط ...
اداروں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے والے نہال ہاشمی نے عدالت سے غیر مشروط معافی مانگ لی

  


کراچی (ڈیلی پاکستان آن لائن) اداروں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے والے پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما سینیٹر نہال ہاشمی نے توہین عدالت کے جرم میں فرد جرم عائد ہونے سے پہلے ہی معافی مانگ لی۔ ان کی جانب سے باقاعدہ معافی نامہ سپریم کورٹ میں جمع کرادیا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق سینیٹر نہال ہاشمی نے سپریم کورٹ سے متنازعہ تقریر کے معاملے پر غیر مشروط طور پر معافی مانگ لی اور باضابطہ طور پر سپریم کورٹ میں  معافی نامہ جمع کرادیا ہے ۔ معافی نامے میں نہال ہاشمی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ انہوں نے بطور وکیل اپنے 30 سالہ کیریئر میں کبھی بھی عدالت کی توہین کرنے کی کوشش نہیں کی، وہ عدالت کا مکمل طور پر احترام کرتے ہیں، ان کی تقریر کو سیاق و سباق سے ہٹ کرپیش کیا گیا ۔ انہوں نے اپنی تقریر میں عمران خان کے خلاف بات کی تھی لیکن اسے اداروں کے خلاف تقریر کے طور پر پیش کیا جار ہا ہے۔ نہال ہاشمی کے معافی نامے میں مزید کہا گیا ہے کہ وہ غیر مشروط طور پر عدالت سے معافی مانگتے ہیں۔

رشوت دینے کا الزام، شہباز شریف نے عمر ان خان کے خلاف 10 ارب روپے ہرجانے کا دعویٰ دائر کردیا

واضح رہے کہ نہال ہاشمی نے اپنی ایک تقریر کے دوران کہا تھا کہ وہ میاں نواز شریف کا احتساب کرنے والوں کے بچوں پر زمین تنگ کردیں گے۔ اداروں کو سنگین نتائج کی دھمکیاں دینے پر نہال ہاشمی کے خلاف مقدمہ درج ہے جس میں انہوں نے عبوری ضمانت حاصل کر رکھی ہے۔ نہال ہاشمی کےخلاف مقدمے میں دہشتگردی کی دفعہ بھی شامل ہے جو کہ عامر وڑائچ ایڈووکیٹ کی درخواست پر شامل کی گئی تھی۔ نہال ہاشمی کی متنازعہ تقریر کا سپریم کورٹ نے نوٹس لے کر حکم دیا تھا کہ ان پر 10 جولائی کو فرد جرم عائد کی جائے گی تاہم لیگی رہنما نے فرد جرم عائد ہونے سے پہلے ہی معافی مانگنے کی تمام تیاریاں مکمل کرلی ہیں۔

مزید : قومی /اہم خبریں