اسلام آباد ہائی کورٹ کاطلحہ ہارون کو امریکہ کے حوالے کرنے کے خلاف دائر درخواست پر اے ڈی سی جی اسلام آباد عبدالستار ایسانی کو (آج ) پیش ہونے کا حکم

اسلام آباد ہائی کورٹ کاطلحہ ہارون کو امریکہ کے حوالے کرنے کے خلاف دائر ...
اسلام آباد ہائی کورٹ کاطلحہ ہارون کو امریکہ کے حوالے کرنے کے خلاف دائر درخواست پر اے ڈی سی جی اسلام آباد عبدالستار ایسانی کو (آج ) پیش ہونے کا حکم

  

اسلام آباد (این این آئی)اسلام آباد ہائی کورٹ نے پاکستانی نژاد امریکی شہری طلحہ ہارون کو امریکہ کے حوالے کرنے کے خلاف دائر درخواست پر اے ڈی سی جی اسلام آباد عبدالستار ایسانی کو (آج )جمعہ کو ذاتی طور پر عدالت میں پیش ہونے کا حکم دے دیا ہے۔ جمعرات کو عدالت عالیہ کی جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے طلحہ ہارون کے والد ہارون رشید کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت کی ۔

اس موقع پر درخواست گزار کے وکیل طارق اسد ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے اور موقف اختیار کیا کہ طلحہ ہارون2014 میں امریکہ سے پاکستان آیا تو اس کے خلاف اس وقت کوئی چارج نہیں تھا۔انہوں نے مذید کہا کہ اے ڈی سی جی نے انکوائری کے بعد طلحہ کو امریکہ کے حوالے کرنے کا فیصلہ15 جنوری2017 کو کیا۔ سماعت کے موقع پر فاضل جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے ڈپٹی اٹارنی جنرل سے استفسار کیا کہ اے ڈی سی جی نے اپنے فیصلے میں کیوں وضاحت نہیں کی کہ طلحہ ہارون کے خلاف کس قسم کے دستاویزی شواہدموجود ہیں۔

تو ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ اس مرحلے پر اس کی ضرورت نہیں تھی، اصل انکوائری امریکہ میں ہوگی۔ سماعت کے دوران فاضل جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ صرف یہ کافی نہیں کہ طلحہ ہارون کو امریکہ نے مانگ لیا تو ہم اسے امریکہ کے حوالے کر دیں۔ طلحہ ہارون اگر امریکہ میں حملے کی منصوبہ بندی کررہا تھا تو اس کے حوالے سے ہر قسم کی سرگرمی کا ثبوت عدالت میں پیش کرنا ضروری ہے ،اے ڈی سی جی کو وضاحت کرنا ہو گی کہ طلحہ ہارون کے خلاف کون سے دستاویزی شواہد ان کے سامنے لائے گئے۔عدالت نے اے ڈی سی جی اسلام آباد عبدالستار ایسانی کو (آج ) جمعہ کو ذاتی طور پر عدالت میں پیش ہونے کا حکم دیتے ہوئے مقدمے کی سماعت ملتوی کر دی۔

مزید :

اسلام آباد -