”24 گھنٹوں میں انٹرنیٹ ٹھیک کر دو ورنہ۔۔۔“ پاکستانی لڑکی نے پی ٹی سی ایل کو اب تک کی سب سے بڑی ”دھمکی“ دیدی، ڈیڈ لائن ختم ہونے تک انٹرنیٹ ٹھیک نہ ہوا تو کیا کرے گی؟ جان کر آپ کے بھی رونگٹے کھڑے ہو جائیں گے

”24 گھنٹوں میں انٹرنیٹ ٹھیک کر دو ورنہ۔۔۔“ پاکستانی لڑکی نے پی ٹی سی ایل کو ...
”24 گھنٹوں میں انٹرنیٹ ٹھیک کر دو ورنہ۔۔۔“ پاکستانی لڑکی نے پی ٹی سی ایل کو اب تک کی سب سے بڑی ”دھمکی“ دیدی، ڈیڈ لائن ختم ہونے تک انٹرنیٹ ٹھیک نہ ہوا تو کیا کرے گی؟ جان کر آپ کے بھی رونگٹے کھڑے ہو جائیں گے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پی ٹی سی ایل انٹرنیٹ استعمال کرنے والے ہر پاکستانی کو کمپنی سے ”نفرت“ کرنا اچھا لگتا ہے (اگرچہ کبھی کبھار ان کی سروس اچھی بھی ہو جاتی ہے)سب ہی اس سے اتفاق کرتے ہیں کہ پاکستان میں پی ٹی سی ایل کا انٹرنیٹ استعمال کرنا جوئے شیر لانے کے مترادف ہے اور اگر ایمانداری سے بات کی جائے تو پی ٹی سی ایل اپنے صارفین کے مسائل کو حل کرنے کی ذرا بھی کوشش نہیں کرتی اور ان کے خلاف شکایات کی اتنی بھرمار ہوتی ہے کہ لاتعداد صارفین چڑچڑاہٹ کا شکار ہو چکے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ وقار یونس نے پہلی مرتبہ اپنی بیٹی کی تصویر سوشل میڈیا پر شیئر کر دی، دیکھنے والے آنکھیں جھپکنا ہی بھول گئے

ایسی ہی ایک صارف عائشہ خالد نے ہفتہ بھر اپنا فون اور انٹرنیٹ ٹھیک کروانے کیلئے شکایت درج کروائیں مگر کمپنی کے کان پر جوں تک نہ رینگی اور اسی وجہ سے لڑکی نے کمپنی کو ایسی ”دھمکی“ دیدی ہے کہ جان کر آپ کے بھی رونگٹے کھڑے ہو جائیں گے۔

اس سے پہلے کراچی کے ایک لڑکے نے کمپنی کو شکایت درج کروانے کے بجائے فیس بک پر کمپنی کے نام ایک ”پریم پتر“ لکھا تھا جس کا ایسا اثر ہوا کہ کمپنی نے پانچ ملازمین کو روزے کی حالت میں اتوار کے روز صارف کے گھر بھیج دیا لیکن عائشہ خالد نے تو فیس بک پر ایسا پیغام جاری کیا ہے کہ سب پاکستانی اس کے ساتھ مل گئے ہیں۔

عائشہ خالد نے لکھا ”تم لوگ کس طرح کے غیر انسان ہو؟ ایک ہفتے سے خراب انٹرنیٹ کی شکایت درج کروا رہی ہوں، اور آج آپ کا ایک ملازم آیا اور کچھ ٹھیک کئے بغیر ہی غیظ و غضب کا مظاہرہ کر کے چلا گیا۔ میں تمہارے حلق میں انگلیاں ڈال کر ساری اکڑ باہر نکال دوں گی۔میں یہ ایسے ہی نہیں کہہ رہی۔میں تمہارے چھوٹے بچوں کیلئے ایک ڈراﺅنا خواب بن جاﺅں گی۔ اگر میرا انٹرنیٹ 24 گھنٹوں میں ٹھیک نہ کیا گیا تو میں ان کے خوابوں میں آ کر انہیں ڈراﺅں گی۔“

عائشہ خالد نے پی ٹی سی ایل کو اس قدر سنگین ”دھمکیاں“ دی ہیں کہ سوشل میڈیا پر ہنسی کا طوفان برپا ہے اور اس پوسٹ کو پڑھنے وہ پاکستانی جو پی ٹی سی ایل نہیں بھی کرتے، یکجہتی کا اظہار کر رہے ہیں۔ اب یہاں یہ بھی تسلیم کرنا ہی پڑے گا کہ پی ٹی سی ایل کے عتاب کا شکار ہر پاکستانی کمپنی کیلئے کچھ ایسے ہی جذبات کا اظہار کرنا چاہتا تھا لیکن کسی کی بھی اتنی ہمت نہ ہوئی لیکن عائشہ خالد نے کسی کی بھی پرواہ نہیں کی اور اپنے دل کی بات کہہ دی۔

یہ بھی پڑھیں۔۔۔ فخر زمان نیول چیف سے ملنے گئے تو انہیں دیکھتے ہی ایسا کام کر دیا کہ سب لوگ بے اختیار مسکرا اٹھے، فخر پاکستان کی منفرد ادا دیکھ کر آپ بھی خوش ہو جائیں گے

عائشہ خالد کو واضح طور پر پاکستانیوں کی حمایت مل رہی ہے، جیسا کہ ایک صارف نے لکھا ”میں عائشہ خالد کیساتھ ہوں۔“

ایک اور صارف نے لکھا ”میں قسم کھاتا ہوں، انہیں اس کی سخت ضرورت ہے، برائے مہربانی انٹرنیٹ ٹھیک کرو۔“

ایک اور صارف نے عائشہ خالد کی حمایت کرتے ہوئے لکھا ”تم نے تو زبردست کر دیا۔“

عائشہ خالد کی اس پوسٹ پر ایک اور صارف نے اپنا غبار نکالتے ہوئے لکھا ”تم صرف ایک ہفتے کے بعد ہی اس قدر پاگل ہو رہی ہو؟؟؟؟ لڑکی! میں ایک مہینے سے اس تشدد کا نشانہ بن رہا ہوں، اور کوئی ایک مرتبہ بھی میرے گھر نہیں آیا، میری شکایت اب بھی باقی ہے، اور مجھے خودکار طریقے سے کالز بھی آتی ہیں اور ایک میں ہوں جو اپنی زندگی کے سب سے دردناک صبر سے گزر رہا ہوں۔“

ایک صارف کو تو یہ ”دھمکی“ بہت پسند آئی جس نے لکھا ”یہ ہوتی ہے شکایت“

ایک صارف نے تو پی ٹی سی ایل سے پوچھ لیا کہ ”تو کیا پیش رفت ہے؟ کیا وہ ڈراﺅنا خواب بن گئی ہے؟“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -