عدالت میں پیش نہ ہونے پر ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمیت لیسکو کے 8افسروں کی گرفتاری کا حکم

عدالت میں پیش نہ ہونے پر ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمیت لیسکو کے 8افسروں ...
عدالت میں پیش نہ ہونے پر ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر سمیت لیسکو کے 8افسروں کی گرفتاری کا حکم

  

لاہور(نامہ نگار)ضلع کچہری کے جوڈیشل مجسٹریٹ نے بجلی چوری کے مقدمہ میں بطور گواہ پیش نہ ہونے پر ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر ،سب انسپکٹراورکانسٹیبل سمیت لیسکو کے 8افسروں کی گرفتاری کا حکم دیاہے۔

عدالتوں سے ضمانت کے بعد مفرورہونے والے 100ملزمان کے کیس داخل دفترکردیئے گئے

جوڈیشل مجسٹریٹ فاروق اعظم سوہل نے ملزم منور حسین کے خلاف درج مقدمہ کی سماعت کی، ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ ایف آئی اے نے لیسکو حکام کی ملی بھگت سے ملزم کو بجلی چوری کے مقدمہ میں بے بنیاد ملوث کیا ہے جبکہ مقدمہ کے گواہ پیش نہ ہونے مقدمہ التواءکا شکار ہے، ملزم کے وکیل نے مزید موقف اختیار کیا کہ لیسکو کے ایس ڈی او کالج روڈ سید حامد حسین شاہ، ٹیکنیکل اسسٹنٹ عمران انجم، کالج روڈ سب ڈویژن اسسٹنٹ لائن مین راشد عدنان، لائن مین لیسکو کالج روڈ سب ڈویژن راشد محمود اور لیسکو ایم اینڈ ٹی سرکل ملتان روڈ کے راشد اقبال عدالتی طلبی کے باوجود بجلی چوری کے مقدمہ میں پیش نہیں ہو رہے جبکہ ایف آئی اے کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر میاں خرم یوسف، سب انسپکٹر محمد بشیر، کانسٹیبل شوکت علی بھی مقدمہ میں پراسکیوشن کے گواہ ہونے کے باوجود گواہی کیلئے پیش نہیں ہو رہے ،ملزم کو ناکافی شواہد کی بنیاد پر بجلی چوری کے مقدمہ سے بری کیا جائے، عدالتی استفسار پر تعمیل کنندہ نے رپورٹ پیش کرتے ہوئے بتایا کہ ملزم منور حسین کیخلاف درج بجلی چوری کے مقدمہ کے گواہوں کو عدالتی طلبی سے بروقت آگاہ کیا جا چکا ہے، جس پر عدالت نے مذکورہ بالا 8افسروں کو25جولائی کوگرفتار کے پیش کرنے کا حکم دے دیا ہے ۔

مزید :

لاہور -