ویڈیو ٹیپ کے ابھی اصل ہونےکا فیصلہ باقی،جج دباؤ میں آ کر فیصلہ کرے تو کیس دوبارہ چل سکتا ہے:بیرسٹر علی ظفر

ویڈیو ٹیپ کے ابھی اصل ہونےکا فیصلہ باقی،جج دباؤ میں آ کر فیصلہ کرے تو کیس ...
ویڈیو ٹیپ کے ابھی اصل ہونےکا فیصلہ باقی،جج دباؤ میں آ کر فیصلہ کرے تو کیس دوبارہ چل سکتا ہے:بیرسٹر علی ظفر

  


اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ملک کے معروف قانون دان بیرسٹر علی ظفر  نے کہا ہے کہ  قانون بہت واضح ہے، سوئس بینک کے فیصلے میں بھی ایک ٹیپ آیا تھا جس میں سپریم کورٹ نے فیصلہ دیا تھا کہ اگر جج دباؤ میں آکر فیصلہ کرے گا تو کیس دوبارہ چل سکتا ہے، مریم نواز کی جانب سے جاری کردہ وڈیو ویڈیو ٹیپ کا ابھی اصل کا فیصلہ ہونا باقی ہے اور جب تک جج خود بیان نہیں دیتے اس وقت تک ہائی کورٹ میں اپیل دوبارہ ہو سکتی ہے،سپریم کورٹ آف پاکستان اس وڈیو کی تحقیقات کرائے، جج ارشد ملک کا اپنی ویڈیو پر بیان سامنے آنا چاہیے ورنہ اس ویڈیو کو حقیقت سمجھا جائے گا۔ نجی ٹی وی سے گفتگو میں مریم نواز کی طرف سے جاری کردہ احتساب عدالت کے جج کی ویڈیو پر اپنی قانونی ر ائے دیتے ہوئے بیرسٹر علی ظفر نے کہا کہ قانون بہت واضح ہے سوئس بینک کے فیصلے میں بھی ایک ٹیپ آیا تھا جس میں سپریم کورٹ نے فیصلہ دیا تھا کہ اگر جج دباؤ میں آکر فیصلہ کرے گا تو کیس دوبارہ چل سکتا ہے۔انہوں نے کہا کہ مریم نواز کی جانب سے جاری کردہ آڈیو ویڈیو ٹیپ کا ابھی اصل کا فیصلہ ہونا باقی ہے اور جب تک جج خود بیان نہیں دیتے اس وقت تک ہائی کورٹ میں اپیل دوبارہ ہو سکتی ہے۔بیرسٹر علی ظفر نے کہا کہ جاری کردہ ویڈیو سے کیس پر کوئی فرق نہیں پڑ سکتا جب تک جج خود آ کر یہ نہ کہیں کہ مجھ پر دباؤ ڈال کر فیصلہ لیا گیا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد


loading...