ڈہر کی مخالفین کا حملہ،کوری برادری کے3افراد قتل،ورثا کا مظاہرہ دھرنا

  ڈہر کی مخالفین کا حملہ،کوری برادری کے3افراد قتل،ورثا کا مظاہرہ دھرنا

ڈہرکی(نامہ نگار)ڈہرکی کے قریبی گاؤں میں دو گرہوں میں دیرینہ دشمنی کے سبب لونڈبرادری کے نامعلوم مسلح افراد نے عدالت میں پیشی پر جانے والے کوری برادری کے لوگوں پر اندھا دھند 

(بقیہ نمبر16صفحہ12پر)

فائرنگ کرکے 3 افراد کو قتل کیا اور فرار ہوگئے ورثا نے مقتولین کی لاشیں اٹھاکر ڈہرکی قومی شاہرہ پر رکھ کراحتجاجی مظاہرہ کیا اور دھرنا دیا۔تفصیلات کے مطابق ڈہرکی کے قریبی گاؤں کھینجوکے مقام پرکوری برادری کے افرادعدالت میں میں پیشی پر جارہے تھے تو راستے میں پہلے سے ہی گھات لگائے بیٹھے لونڈ برادری کے نامعلوم مسلح افرادنے ان پر اندھادھند فائرنگ شروع کرکے کوری برادری کے3 نو جوانوں جلال کوری،قبول کوری اورگھنوکوری کوقتل کرکے فرارہوگئے شدیدفائرنگ کے باعث علاقہ میں خوف حراس کی فظا چھاگئی جبکہ ورثا جائے وقوع پر پہنچ کرنوجوانوں کی لاشیں اٹھاکرڈہرکی قومی شاہرہ روڈ پر رکھ کر قومی شاہر ہ بلاک کردی مقتولین کے ورثا اورکوری برادری کے دیگر سینکڑں افرادمردوخواتین اپنے معصوم بچوں سمیت قاتلوں کی عدم گرفتاری کے خلاف سخت احتجاجی مظاہرہ کیا اور چارگھنٹے لاشیں تپتی دھوپ میں روڈ پر رکھ کر دھرنا لگایا جسکی وجہ سے سندھ اور پنجاب سے آنے جانے والی تمام ٹریفک معطل ہوگئی روڈ کے دونوں اطراف سے گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئیں جبکہ پولیس کی قاتلوں کو گرفتاری کرنے کی یقین دھانی کرانے پرورثا نے احتجاجی مظاہرہ ختم کردیا آخری اطلاعات تک پولیس کوئی بھی گرفتاری عمل میں نہیں لاسکی ہے ورثاکا کہنا ہے کہ قاتلوں کو علاقہ کے سیاسی بااثرشخصیات اورصوبائی حکومت کی پشت پناہی حاصل ہے اس لیئے پولیس قاتلوں کے کلاف کاروائی کرنے سے گریزاں ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...