سابق ڈی جی سپورٹس بورڈعثمان انور جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

سابق ڈی جی سپورٹس بورڈعثمان انور جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

لاہور(نامہ نگار)احتساب عدالت کے جج امیر محمد خان نے یوتھ فیسٹیول میں کرپشن اورغیر قانونی ٹھیکے دینے کے الزام میں گرفتارسابق ڈی جی سپورٹس بورڈعثمان انورکومزید 14روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کردیاہے۔کیس کی سماعت شروع ہوئی توتفتیشی افسر نے عدالت کو بتایا کہ عثمان انور نے یوتھ فیسٹیول کے مختلف ٹھیکوں میں پیپرا رولز کی خلاف ورزی کی، جس سے سرکاری خزانے کو 200ملین روپے کا نقصان ہوا، چیزوں کی خریداری ان فرضی کمپنیوں سے کی جو غیررجسٹرڈ تھیں،سپورٹس یونیفارم، کھانے اور میڈیا ایڈورٹائزنگ کے ٹھیکے پیپرا رولز کے برعکس دئیے گئے، ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ معاملے سے عثمان انور کاکوئی تعلق نہیں،ان پرالزامات بے بنیاد ہیں،ملکی تاریخ میں ہوتھ فیسٹیول میں بڑے بڑے ریکارڈقائم ہوئے،رانا مشہود کو پھنسانے کے لئے انکوائری دوبارہ کھولی گئی،تیسری مرتبہ انکوائری شروع کرنے کا اقدام چیلنج کرنا چاہتا ہوں،نیب مجھے اپنے موکل سے نہیں ملنے دے رہا۔

، تفتیشی افسرنے کہا انکوائری کبھی بند نہیں ہوئی،صرف تفتیشی افسر تبدیل ہوتے رہے ہیں،انکوائری بند کرنے کا اختیار صرف ایگزیکٹو بورڈ کے اجلاس میں چیئرمین نیب کو ہے،جس پرعدالت نے سابق ڈی جی سپورٹس بورڈعثمان انورکومزید 14روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے کرتے ہوئے 20جولائی کو انہیں دوبارہ عدالت میں پیش کرنے کا حکم دیاہے۔

مزید : علاقائی


loading...