سرمایہ کاری اور صنعت کاری عمل کو تیز کرنے کیلئے پالیسیوں میں تسلسل ضروری ،عبدالرزاق داءود

    سرمایہ کاری اور صنعت کاری عمل کو تیز کرنے کیلئے پالیسیوں میں تسلسل ضروری ...

لاہور(لیڈی رپورٹر) وزیراعظم کے مشیر برائے تجارت عبدالرزاق داؤد نے گزشتہ روز محکمہ صنعت و تجارت کا دورہ کیا ۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت میاں اسلم اقبال اور محکمہ صنعت کے اعلیٰ افسران نے ان کا استقبال کیا ۔ مشیر تجارت اور صوبائی وزیر صنعت نے بریفنگ اجلاس کی صدارت کی جس میں صوبائی وزیر میاں اسلم اقبال اور سیکرٹری صنعت طاہر خورشید نے محکمہ صنعت و تجارت کے تنظیمی ڈھانچے ، پالیسیوں ، اہداف اور ;200;ئندہ کے لاءحہ عمل کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی ۔ سرمایہ کاری بورڈ اسلام ;200;باد کے چیئرمین ، سی ای او پنجاب سرمایہ کاری بورڈ ، چیئرمین پیڈمک ، چیئرمین فیڈ مک ، محکمہ صنعت و تجارت کے اعلیٰ افسران کے علاوہ لیسکو کے سی ای او اور دیگر حکام نے بھی اجلاس میں شرکت کی ۔ مشیر تجارت عبدالرزاق داؤد نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ محکمہ صنعت و تجارت پنجاب صنعتو ں اورسرمایہ کاری کے فروغ کے حوالے سے شاندار کام کررہاہے اوراسے اسی رفتار سے کام کرنا ہوگا ۔ ہمارا کام صنعت کاروں اور سرمایہ کارو ں کو سہولتیں دینا ہے اور ہم یہ سہولتیں فراہم کریں گے ۔ انہو ں نے کہاکہ سرمایہ کاری اور صنعت کاری کے عمل کو تیز کرنے کےلئے پالیسیوں میں تسلسل بھی ضروری ہے ۔ انہو ں نے کہاکہ چین اپنی در;200;مدات بڑھانا چاہتا ہے او رہ میں بھی اس سلسلے میں چین کو اپنی بر;200;مدات بڑھانے کےلئے کام کرنا ہے ۔ جاپان ایس ایم ای سیکٹرکے فروغ کےلئے فنڈ دینے کےلئے تیارہے اورہ میں بھی اس سلسلے میں پالیسی بنانا ہوگی ۔ انہو ں نے کہاکہ انسپکشن کے نظام کا خاتمہ ضروری ہے تاہم فیکٹریوں میں مزدوروں کے تحفظ کا بھی مناسب نظام ہونا چاہیے ۔ اجلاس میں صنعتی مراکز میں توانائی کی ضروریات پوری کرنے کےلئے اعلی سطحی کمیٹی تشکیل دی گئی جو اس حوالے سے اپنی سفارشات مرتب کرکے پیش کرے گی ۔ قبل ازیں سیکرٹری صنعت و تجارت طاہر خورشید نے نئی صنعتی پالیسی ،صوبے میں صنعتی مراکز کے قیام اور دیگر اہداف کے بارے میں اجلاس کو ;200;گا ہ کیا ۔ صوبائی وزیر صنعت و تجارت میا ں اسلم اقبال نے بریفنگ دےتے ہوئے بتایاکہ صوبے کے 36 اضلاع میں کاٹیج انڈسٹری کی بحالی کا پلان بنالیاہے اور مرحلہ وار پروگرام کے تحت صوبے کے تمام اضلاع کی کاٹیج انڈسٹری کو بحال کریں گے ۔ انہو ں نے بتایاکہ گوجرانوالہ میں 160 ایکڑ پر سمال انڈسٹریل اسٹیٹ جبکہ وزیر ;200;باد میں 60 ایکڑ پر سمال انڈسٹریل اسٹیٹ بنائی گئی ہیں جن کا افتتاح اس ماہ کے ;200;خر میں ہوگا ۔ چھوٹی او ردرمیانے درجے کی صنعتوں کے فروغ کے لئے بھی تین سکی میں منظور ہوچکی ہیں اور ان سکیموں کا بھی جلد اجراء کیاجارہاہے ۔ انہو ں نے کہاکہ سکل ایڈوائزری فورم کی تشکیل نو کی جاچکی ہے جس میں شعبہ صنعت سے وابستہ نمایاں صنعتکارو ں کو شامل کیاگیاہے ۔ پنجاب سکل ڈویلپمنٹ اتھارٹی کا قیام بھی عمل میں لایاجاچکا ہے اور یہ ادارہ اس سال کے ;200;خر تک مکمل ;200;پریشنل ہوجائے گا ۔ انہو ں نے بتایاکہ وزیراعظم کے ویژن کے مطابق ٹیوٹا ،پی وی ٹی سی اور دیگر اداروں کو ایک چھتری تلے لایاگیاہے اور ٹویٹ سیکٹر میں اصلاحات لائی گئی ہیں ۔ انہو ں نے بتایاکہ چار نئی ٹیکنیکل یونیورسٹیاں بھی بنائی جارہی ہیں جو صنعت کی ضروریات کے مطابق افرادی قوت تیار کریں گی ۔ انہو ں نے کہاکہ ہنر مند نوجوان پروگرام کا بھی ;200;غاز کیاجارہاہے ۔ فنی تعلیم کے ادارے صرف ڈگریاں ہی نہیں دیں گے بلکہ مارکیٹ کی ضروریات کے مطابق نوجوانوں کو معیاری فنی تعلیم سے ;200;راستہ کرنے میں اپنا کردار ادا کریں گے ۔ انہو ں نے بتایاکہ تمام صنعتی مراکز میں ون ونڈو سروس کی سہولت فراہم کی جائے گی اور صنعت کارو ں کی سہولت کے لئے تمام ٹیکسوں کو یکجا کیاجارہاہے ۔ صوبائی وزیر نے کہاکہ پنجاب کو وزیراعظم عمران خان کے ویژن کے مطابق صنعتی ، تجارتی او رمعاشی سرگرمیوں کا مرکز بنائیں گے اور پنجاب اس حوالے سے سبقت لے گا ۔

عبدالرزاق داؤد

مزید : صفحہ آخر


loading...