سینیٹ کا نیا چیئرمین مسلم لیگ (ن) سے ہوگا،رہبر کمیٹی کا فیصلہ

سینیٹ کا نیا چیئرمین مسلم لیگ (ن) سے ہوگا،رہبر کمیٹی کا فیصلہ

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک،این این آئی) اپوزیشن کی رہبر کمیٹی نے نیا چیئرمین سینیٹ اکثریتی جماعت مسلم لیگ (ن)کو دینے کی منظوری دے دی۔ذرائع کے مطابق رہبر کمیٹی کی جانب سے منظوری پر مسلم لیگ(ن) نے راجہ ظفر الحق اور مصدق ملک سمیت دیگر2 ناموں پر مشاورت شروع کردی جبکہ2 دنوں میں اپنے امیدوار کے نام کمیٹی کو آگاہ کرے گی۔ذرائع نے بتایا کہ چیئرمین سینیٹ کا عہدہ ملنے کے بعدمسلم لیگ (ن) اپوزیشن لیڈر کا عہدہ چھوڑ دے گی جس کے باعث رہبر کمیٹی سینیٹ میں نئے اپوزیشن لیڈر سے متعلق بھی مشاورت کررہی ہے۔ذرائع کے مطابق پیپلز پارٹی کے ڈپٹی چیئرمین سینیٹ سلیم مانڈوی والا اپنے عہدے پر کام کرتے رہیں گے۔چیئرمین سینیٹ صادق سنجرانی کے خلاف 9 جولائی کو تحریک عدم اعتماد سینیٹ سیکرٹریٹ میں جمع کروا دی جائے گی جس کیلئے کل ممبران کے ایک چوتھائی ارکان کے دستخط ضروری ہوتے ہیں لیکن اپوزیشن کوشش کر رہی ہے کہ اپنے تمام ممبران سینیٹ (67) سے درخواست پر دستخط کرائے جائیں اور اس حوالے سے رابطے بھی شروع کر دئیے گئے۔دوسری جانب وزیر اعظم نے چیئرمین سینیٹ کیخلاف تحریک عدم اعتماد ناکام بنانے کیلئے وزیر پارلیمانی امور اعظم سواتی کوٹاسک دے دیا۔ایک انٹرویومیں اعظم سواتی نے کہاکہ جس طرح حزب اختلاف کو بجٹ کے معاملے میں ناکامی کا سامنا کرنا پڑا، اسی طرح عدم اعتماد کی تحریک میں بھی انہیں ناکامی ہوگی۔انہوں نے دعویٰ کیا کہ عدم اعتماد کی تحریک کو ناکام بنانے کیلئے وزیر اعظم نے انہیں جو ٹاسک دیا ہے اس میں کامیاب ہونگے۔پاکستان پیپلزپارٹی کے سیکرٹری جنرل نیر بخاری نے اس حوالے سے کہا کہ چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی ک لئے نمبر گیم واضح ہے تاہم جو رکن پارٹی پالیسی کے برعکس ووٹ دے گا اس کیخلاف کارروائی ہوگی۔

رہبر کمیٹی/اعظم سواتی

مزید : صفحہ اول


loading...