چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی کیلئے آئینی راستہ استعمال کیا جائیگا

  چیئرمین سینیٹ کی تبدیلی کیلئے آئینی راستہ استعمال کیا جائیگا

مسلم لیگ (ن) کی مرکزی رہنما مریم اورنگزیب نے کہا ہے موجودہ سیاسی حالات کو سامنے رکھ کر ہی اپوزیشن کی سیاسی جماعتوں کے اہم رہنماؤں پر مشتمل رہبر کمیٹی نے یہ فیصلہ کیا ہے کہ چیئرمین سینٹ کیخلاف ایک متفقہ قرار داد لائی جائے وہ اپنا رول صحیح طرح سے ادا نہیں کر پا رہے ہیں اسلئے ان کو ہٹانے کیلئے اپوزیشن نے ایک آئینی راستہ اختیار کیا ہے اور اس کے مطابق ہی ہم ان کی تبدیلی کیلئے اپوزیشن کی مشاو ر ت سے آگے بڑھیں گے۔وہ ایشو آف دی ڈے میں اظہار خیال کررہی تھیں۔ان کا کہنا تھا مجھے اس بات کی سمجھ نہیں آرہی جب سے اپوز یشن کی اے پی سی ہوئی ہے تب سے حکومت اپوزیشن جماعتوں کیخلاف متحرک ہو چکی ہے اوراپوزیشن کے اہم رہنماؤں کو جیلوں میں ڈالنے کی تیاریاں کررہی ہے اپوزیشن کوئی غیر آئینی کام نہیں کررہی بلکہ قانونی طریقے سے چیئرمین کی تبدیلی کے عمل کو آگے بڑھا رہی ہے اپوز یشن کی سینٹ میں اکثریت ہے اور ہمیں یقین ہے ہماری قرار داد اکثریت سے پاس ہو جائے گی۔

مریم اورنگزیب

مزید : صفحہ اول


loading...