عوام بے جا ٹیکسوں سے ذہنی مفلوج ہوگئے ہیں،ثروت اعجاز قادری 

عوام بے جا ٹیکسوں سے ذہنی مفلوج ہوگئے ہیں،ثروت اعجاز قادری 

کراچی(اسٹاف رپورٹر) سربراہ پاکستان سنی تحریک محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ عوام وتاجر مہنگائی اور بے جا ٹیکسوں سے ذہنی مفلوج ہوگئے ہیں،کاروبار نہ ہونے کے برابر اشیاء عوام کی قوت خرید سے باہر ہے،خود کشیوں میں اضافہ غریب بھوک وافلاس سے پریشان ہیں،عوام اور تاجروں کو سہولتیں فراہم کرنا حکومتی ذمہ داری ہے،حکومت غریبوں اور تاجروں کے لئے ٹیکس پالیسیاں نرم کرئے،بجلی وگیس اور پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے سے مہنگائی بام عروج پر پہنچ گئی ہے،مہنگائی کی یہ ہی صورتحال رہی تو عوام میں مویوسیاں جنم لینگی،ملک کے بڑے شہروں میں تاجر برادری احتجاج کررہی ہے اگر اس پر حکومت نے کان نہ دھرے تو پھر تبدیلی کیلئے عوام خود سڑکوں پر ہونگے،تاجروں پر لگائے گئے،عوام اور تاجروں کے حقوق کیلئے ان کے ساتھ ہیں،حکومت کو اپنی معاشی وٹیکسز پالیسی پر نظرثانی کرنی چاہیے،ٹیکس دینے سے انکاری نہیں ٹیکسز پالیسیاں سخت اور مہنگائی دونوں نے عوام وتاجر کی زندگی اجیرن کردی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے حیدر آباد سول اسپتال میں 5افراد کی خودکشیوں کیسز پر گہری تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کیا،ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ قانون کی حکمران سے پائیدار امن اور روزگار کے ذرائع کھولیں گے،غیر جمہوری فیصلے کسی طور بھی عوام اور ملک کے مفاد میں نہیں ہیں،سیاست اور جمہوریت معیشت کو استحکام دینے کیلئے عوام دوست پالیسی کا عندیہ دیتی ہے،انہوں کا کہنا تھا کہ مہنگائی اور غریبوں پر بے جا ٹیکسز ترقی نہیں معاشی بدحالی جنم لیتی ہے،معاشی استحکام کیلئے اب دعوؤں سے نہیں عملی طور پر ملک کی دولت لوٹنے والوں سے وصولیابی کرکے قومی خزانے میں جمع کی جائے،کرپشن کا اربوں کھرپوں روپیہ بیرونی ممالک میں گردش کررہا ہے،حکومت لوٹی گئی قومی دولت واپس لانے کیلئے ہر ممکن اقدامات کرئے عوام ساتھ کھڑے ہونگے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...