ماربل انڈسٹریز پر 17فیصدسیلز ٹیکس لگانا ظلم کے مترادف ہے،بدراقبال 

  ماربل انڈسٹریز پر 17فیصدسیلز ٹیکس لگانا ظلم کے مترادف ہے،بدراقبال 

کراچی(اکنامک رپورٹر)آل کراچی ماربل انڈسٹریز ایسوسی ایشن کے بانی چیئرمین بدر اقبال نے حکومت کی جانب سے ماربل انڈسٹریز پر 17سیلز ٹیکس لاگو کرنے کے فیصلے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اس طرح کے اقدامات سے کاروبار کرنا انتہائی مشکل ہوجائے گا۔ماربل انڈسٹری پہلے ہی ٹیکس کی مد میں حکومت کو بھاری رقوم دے رہی ہے۔فیکٹری اور شوروم کے لیے الگ الگ ٹیکس کی پالیسی سے انڈسٹری سے وابستہ افراد ڈبل ٹیکس دینے پر مجبور ہوں گے۔ہفتہ کو جاری بیان میں بدر اقبال نے کہا کہ ماربل انڈسٹری سے منسلک افراد کا کام سے فیکٹری سے شروع ہو کر اس وقت تک ختم نہیں ہوتا جب تک اس کی فروخت نہ ہوجائے۔اسی لیے سابقہ دور حکومت میں طے ہوا تھا کہ ماربل انڈسٹری سے وابستہ افراد کے الیکٹرک کی جانب سے جاری کیے گئے بلز پر یونٹ کے حساب جنرل سیلز ٹیکس ادا کریں گے اور اس کی وجہ سے اس انڈسٹری سے وابستہ افراد خود بخود فائلر بن گئے تھے۔انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے ماربل انڈسٹریز پر 17فیصد سیلز ٹیکس لاگو کردیا ہے اور ظلم کی انتہا یہ ہے کہ اب فیکٹریز اور شورومز کو الگ الگ 17فیصد سیلز ٹیکس ادا کرنا ہوگا۔ماربل انڈسٹری سے منسلک زیادہ افراد جن کی فیکٹریاں ہیں ان کے شورومز بھی ہیں۔حکومت کی اس پالیسی کی وجہ سے اب ہمیں 34فیصد سیلز ٹیکس ادا کرنا ہوگا جو کہ موجودہ کاروباری صورت حال میں ناممکن امر ہے۔انہوں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ ماربل انڈسٹری پر عائد اس ظالمانہ ٹیکس کو فوری واپس لیا جائے بصورت دیگر ہم اپنا کاروبار بند کرنے پر مجبور ہوں گے،جس سے حکومت کو ریونیو کی مد میں بھاری نقصان اٹھانا پڑے گا۔

مزید : صفحہ آخر


loading...