پی ٹی آئی کی سیاست کا محور ملکی اداروں کو مضبوط اور مستحکم بنانا ہے:محمود خان

پی ٹی آئی کی سیاست کا محور ملکی اداروں کو مضبوط اور مستحکم بنانا ہے:محمود خان

پشاور(سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف واحد ملکی جماعت ہے جو کراچی سے لیکر خیبر تک تمام قومیتوں سے تعلق رکھنے والے افراد کی نمائندگی کر رہی ہے۔ انھوں نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی سیاست کا محور ملکی اداروں کو مضبوط اور مستحکم بنانا ہے تاکہ عوامی فلاحی ریاست کا خواب پورا کیا جا سکے۔ انہوں نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کی حکومت عوامی سوچ کی عکاس ہے اور یہی وجہ ہے کہ تاریخ میں پہلی مرتبہ خیبرپختونخوا کی عوام نے دوتہائی اکثریت سے تحریک انصاف کو اپنا سیاسی نمائندہ منتخب کیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ نے سوات اور ملاکنڈ ڈویژن کے عوامی وفود سے ملاقات کے دوران کیا۔ انھوں نے واضح کیا کہ ہم عوامی لوگ ہیں اور ہمیشہ عوام کے درمیان رہینگے۔ تحریک انصاف کی قیادت عوامی خدمت کے جذبے سے سرشار ہے۔ انھوں نے سوات اور ملاکنڈ ڈویڑن سے آئے وفود کے عوامی مسائل سنے اور موقع پر ان کے حل کیلئے احکامات بھی جاری کیے۔ وزیراعلی نے کہا کہ پورے صوبے اور بالخصوص ملاکنڈ ریجین میں سیاحت کے فروغ کے لیے انقلابی اقدامات کیے جا رہے ہیں جس سے نہ صرف عوام کو روزگار کے مواقع میسر ہونگے بلکہ ملکی معیشت کو مستحکم کرنے میں بھی ملاکنڈ ڈویژن ایک کلیدی کردار ادا کر سکے گا۔ وزیر اعلیٰ نے واضح کیا کہ اس سال ملاکنڈ میں سیاحوں کی ریکارڈ تعداد میں آمد ہوئی۔ انھوں نے کہا کہ باززئی کالام روڈ سے سیاحت کو مزید فروغ ملے گا جبکہ بائی زئی ایریگیشن چینل کی تعمیر سے ہزاروں ایکڑ زمین سیراب ہوگی جس سے نہ صرف زراعت کے شعبے کو فروغ ملے گا بلکہ ہزاروں کی تعداد میں عوام کو ذریعہ معاش بھی میسر ہو گا۔ انھوں نے کہا کہ موجودہ حکومت اداروں کو مضبوط اور فعال بنانے کے لیے اصلاحات متعارف کیے ہیں جن کے نتائج عوام کے سامنے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ ملکی تاریخ میں پہلی مرتبہ اداروں نے سیاسی غنڈوں اور کرپٹ عناصر کے خلاف کھل کر کاروائیوں کا آغار کیا ہے جو اس بات کا منہ بولتا ثبوت ہے کہ موجودہ حکومت نے اداروں میں سیاسی مداخلت کا خاتمہ کر دیا ہے۔وزیر اعلیٰ نے واضح کیا کہ موجودہ حکومت نے صوبے کی ترقی کے لیے ہر محکمے میں ریکارڈ اصلاحات متعارف کرائیں ہیں جن سے براہ راست عوام مستفید ہو رہے ہیں۔ وزیر اعلیٰ اصلاحات کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ صوبے کے عوام کو مفت صحت سہولیات کی فراہمی، دور دراز علاقوں میں ڈاکٹروں کی موجودگی کو یقینی بنانے کے ساتھ ساتھ صحت سہولیات کے مراکز کی فعالی، سکولوں میں اساتذہ کی کمی کا خاتمہ، پرائمری سکولوں میں کلاس رومز کی تعمیر، ماحولیاتی ترقی کے لیے ایک ارب درختوں کی شجرکاری، صوبے بھر سے تجاوزات اور پولی تھین بیگز کے خاتمے کے لئے بڑے پیمانے پر کریک ڈاؤن اور دیگر اقدامات صوبے کی عوام کی فلاح کے لیے اٹھائے گئے ہیں۔ وزیر اعلیٰ نے واضح کیا کہ قبائلی اضلاع کے انضمام کے بعد صوبائی حکومت کی ذمہ داریاں مزید بڑھ گئی ہیں اور اب موجودہ حکومت قبائلی اضلاع کی ترقی کے لیے ترجیحی بنیادوں پر کام کر رہی ہے۔ انھون نے کہا کہ موجودہ حکومت نے 10 ماہ کے قلیل عرصے میں تمام قبائلی اضلاع کے عوام کو نہ صرف مفت صحت سہولیات فراہم کی ہیں بلکہ نوجوانوں کو روزگار کے موقع فراہم کرنے کے لیے بلا سود قرضوں کی فراہمی بھی کر رہی ہے۔ اس کے علاوہ موجودہ حکومت نے ان علاقوں کی ترقی کے لیے عوامی ترجیحات کے مطابق دس سالہ منصوبہ بندی مکمل کی ہوئی ہے جس کے تحت 100 ارب روپے قبائلی اضلاع کی ترقی کے لیے استعمال کیے جائیں گے۔

مزید : صفحہ اول


loading...