دشمن عناصر نے فرقہ واریت سے وطن عزیز کو کمزور بنانے کی سازشیں شروع کر دیں: نور الحق قادری

دشمن عناصر نے فرقہ واریت سے وطن عزیز کو کمزور بنانے کی سازشیں شروع کر دیں: ...

  

اسلام آباد(آن لائن) وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری نے کہاہے کہ علماء کرام توہین رسالت سمیت صحابہ کرام اور اہل بیت کی توہین کرنے والے عناصر سے لاتعلقی کا اعلان کریں،ملک دشمن عناصر دہشت گردی کے بعد اب فرقہ واریت سے وطن عزیز کو کمزور بنانے کی سازشیں شروع کردی ہیں،اسلام آباد میں مندر کی تعمیر سے متعلق علماء کرام سمیت اسلامی نظریاتی کونسل کی سفارشات کے بعد فیصلہ کیا جائے گا۔ پیر کے روز مجلس علماء پاکستان کے زیر اہتمام نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں پیغام امن کانفرنس کا انعقاد کیا گیا کانفرنس میں بادشاہی مسجد کے خطیب مولانا عبد الخبیر آزاد،وفاقی وزیر مذہبی امور پیر نور الحق قادری، مولانا فضل الرحمن خلیل علامہ عارف واحدی پیر نقیب الرحمن سمیت دیگر علما و مشائخ شریک ہوئے اس موقع پر کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے چیرمین مجلس علماء پاکستان اور بادشاہی مسجد کے خطیب مولانا عبد الخبیر آزاد نے کہاکہ ہم توہین اور تکفیر دونوں کے خلاف ہیں اورجو بھی اسلاف کی توہین کرے یا کسی فرقے کی تکفیر کرے اسے سزا دی جائے انہوں نے کہاکہ توہین اور تکفیر کے خلاف قانون سازی کی جائے انہوں نے کہاکہ اس وقت پیغام پاکستان قومی بیانیہ بن چکا ہے پیغام پاکستان کے بیانیہ سے ملک میں دہشتگردی کا خاتمہ اور امن قائم ہوا پیغام پاکستان کو فرد فرد تک پہنچانے کی ضرورت ہے کانفرنس کا مقصد مذہبی ہم آہنگی و رواداری کو فروغ دینا ہے پیغام پاکستان کو پارلیمنٹ میں پیش کر کے آئین کا حصہ بنایا جائے انہوں نے کہاکہ ملک کو اسوقت درپیش چیلنجز کا سامنا ہے پوری قوم دہشتگردی کیخلاف متحد ہے، پاک فوج کے شانہ بشانہ کھڑے ہیں ملک اسوقت فرقہ وارانہ اور مسلکی فسادات کا متحمل نہیں ہو سکتا ہم سب کو مل کر اسلام دشمن قوتوں کی سازشوں کو ناکام بنانا ہو گا انہوں نے کہاکہ بھارت کشمیر میں ظلم وستم کر رہا ہے بھرپور مذمت کرتے ہیں کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان خلیل نے کہاکہ پاکستان دشمنوں کو ایک نظر نہیں بھاتا ہے اور اسی مقصد کیلئے ملک کے مشرقی اور مغربی بارڈر پر تخریب کاری لے اڈے بنائے گئے جن کا پاک فوج نے قلعہ قمع کیا ہے، کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے علامہ عارف حسین واحدی نے کہاکہ اتحاد امت کے بغیر کوئی ملک ترقی نہیں کرسکتا، پاکستان اتحاد کت نام پر بنایا گیا تھا پاکستان کو ازاد کرانے کیلئے کلمے کے سائے تلے تمام علماء اکٹھے ہوئے اور جدوجہد کی انہوں نے کہاکہ جب ہم متحد تھے تو انگریزوں اور ہندوؤں سے اپنا ملک چھین لیا اوراج دشمن کے ایجنڈے پر چل کر کوئی وحدت کو سبوتاڑ کرنے کی کوشش کرے گا تو علما اس کا راستہ روکیں گے اانہوں نے کہاکہ ماضی میں بھی علما کرام نے فرقہ واریت کو شکست دی تھی اور اج بھی تمام مسالک کے علما اکٹھے ہیں انہوں نے کہاکہ اہل بیت، صحابہ کرام، ازواج مطہرات کی توہین کو کوئی مسلمان برداشت نہیں کر سکتا ہے جو شیعہ سنی میں اختلاف کی بات کرتا ہے وہ مسلمان ہی نہیں ہے ۔

نور الحق قادری

مزید :

صفحہ آخر -