دھماکہ خیز مواد رکھنے کے الزام میں گرفتار ملزمان 93 سال قید بامشقت کی سزا

دھماکہ خیز مواد رکھنے کے الزام میں گرفتار ملزمان 93 سال قید بامشقت کی سزا

  

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورکی انسداددہشت گردی کی خصوصی عدالت نے دہشت گردی کی غرض سے دھماکہ خیزمواد اور اسلحہ رکھنے کے الزام میں گرفتار3ملزموں کو مجموعی طور پر 93 سال قید بامشقت اورجائیدادبحق سرکارضبط کرنے کے احکامات جاری کردئیے ہیں سرکار کی جانب سے سینئرپبلک پراسیکیوٹررضاخان نے مقدمے کی پیروی کی استغاثہ کے مطابق محکمہ انسداددہشت گردی نے کچھ عرصہ قبل بہادرکلے کے قریب ایک کارروائی کے دوران ملزمان احسان اللہ ٗ کامران اورپرویزساکنان افغانستان کو گرفتارکرکے ان کے قبضے سے بھاری مقدارمیں دھماکہ خیزمواد برآمد کرلیاتھا جوملزم دہشت گردی کی غرض سے دوسرے مقام پرمنتقل کررہے تھے خصوصی عدالت نے مقدمے کی سماعت مکمل ہونے اوراستغاثہ کی جانب سے ملزموں پر جرم ثابت کرنے پرانہیں مجموعی طورپر93سال قید بامشقت اورجائیدادضبط کرنے کے احکامات جاری کئے تفصیلی فیصلے کے مطابق ملزموں کوفی کس زیردفعہ 5 ایکسپلوسیوسبسٹانس ایکٹ خیبر پختونخوا2013ء کے تحت 14سال قید بامشقت اور تمام جائیدادبحق سرکارضبط کرنے کے احکامات جاری کئے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -