ون مین شوکے منفی کلچر کا خاتمہ کیا، اب کام مشاورت سے ہوتے ہیں: عثما ن بزدار

ون مین شوکے منفی کلچر کا خاتمہ کیا، اب کام مشاورت سے ہوتے ہیں: عثما ن بزدار

  

لاہور(جنرل رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب سردار عثمان بزدار سے مختلف اضلاع کے ارکان قومی اسمبلی نے ملاقات کی۔ ارکان قومی اسمبلی نے وزیراعلیٰ عثمان بزدار کو جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کے لئے افسران کی تعیناتی پر مبارکباد دیتے ہوئے کہا کہ جنوبی پنجاب سیکرٹریٹ کیلئے افسران کی تعیناتی آپ کا تاریخی اقدام ہے۔ آپ نے پنجاب کو حقیقی ترقی کی راہ پر گامزن کردیا ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ وسائل کی کمی ترقی کیلئے ہمارے عزم کی راہ میں حائل نہیں ہوسکتی۔ترقیاتی منصوبوں کی تشکیل میں ارکان اسمبلی کی مشاورت یقینی بنائی جائے گی۔صوبے میں ون مین شو کے منفی کلچر کا خاتمہ کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ اب سب کام مشاورت سے ہوتے ہیں۔ترقی کی روشنی ایک جگہ محدودنہیں ہوگی۔ارکان اسمبلی کی تجاویز اورسفارشات میرے لئے بے حد اہمیت کی حامل ہیں۔پنجاب کے زیر تکمیل ترقیاتی منصوبوں کو پایہ تکمیل تک پہنچایا جائے گا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار سے ملاقات کرنیوالوں میں چیف وہیپ قومی اسمبلی عامر ڈوگر،شوکت علی بھٹی،نواب شیر وسیر اورحاجی امتیاز شامل تھے۔صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت بھی اس موقع پر موجود تھے۔ سردار عثمان بزدار سے وفاقی وزیر صنعت و پیداوارمحمد حماد اظہر نے ملاقات کی۔وزیراعلیٰ آفس میں ہونے والی ملاقات میں فلاح عامہ کے منصوبوں،حلقے کے مسائل اورصنعتی عمل کو تیز کرنے کے حوالے سے اقدامات پر تبادلہ خیال کیاگیا۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ پسماندہ علاقوں کی ترقی کے ساتھ لاہورکی ڈویلپمنٹ پر بھی پورا فوکس ہے۔لاہور میں سٹیٹ آف دی آرٹ مدراینڈ چائلڈ ہسپتال پر کام جاری ہے۔وزیراعظم عمران خان نے لاہوررنگ روڈ سدرن لوپ تھری کے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھ دیا ہے۔انہوں نے کہا کہ فردوس مارکیٹ انڈر پاس پراجیکٹ پر دن رات کام ہورہاہے۔لاہور کے سیوریج کے نظام کو بہتر بنائیں گے۔صوبائی دارالحکومت میں عوام کو مزید سہولتیں فراہم کی جائیں گی۔انہوں نے کہا کہ لاہور کے عوام کو سہولتوں کی فراہمی کیلئے اربوں روپے کے منصوبوں پر تیزی سے کام ہورہا ہے۔گزشتہ مالی سال میں کورونا کی وجہ سے صنعتی و کاروباری سرگرمیاں کو پہنچنے والے نقصان کے ازالے کیلئے 18 ارب روپے کا ٹیکس ریلیف پیکیج دیا۔ رواں مالی سال میں 56 ارب روپے کا ریلیف پیکیج دیا گیا ہے تاکہ صنعت و کاروبار کو سہارا مل سکے۔انہوں نے کہا کہ پنجاب میں 13 سپیشل اکنامک زونز پر کام جاری ہے۔پنجاب میں اس وقت 10 ہزار ایکٹر سے زائد رقبے پر انڈسٹریل اسٹیٹس کا قیام عمل میں لایا جارہا ہے۔ تحریک انصاف کی حکومت عوام کے مسائل کے حل کیلئے کوشاں ہے۔منتخب نمائندوں کے علاقوں میں ترقیاتی کام ان کی مشاورت سے ہوں گے۔پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب بھی اس موقع پر موجود تھے۔سردار عثمان بزدارکی زیر صدارت اعلی سطح کااجلاس منعقد ہوا، جس میں بورڈ آ ف ریونیو میں اصلاحات کیلئے مجوزہ اقدامات کا جائزہ لیاگیا۔سینئر ممبر بورڈآف ریونیونے محکمے میں اصلاحات اوراراضی سینٹرز کی تعداد بڑھانے کے حوالے سے بریفنگ دی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ ریونیو کے حوالے سے عوام کی شکایات کے ازالے کیلئے بنیادی اصلاحات کی جائیں گی۔ریونیو کا ایسا نظام وضع کیاجائے گا جس سے عوام کو سہولت ملے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے بورڈ آ ف ریونیو میں اصلاحات کے لئے کمیٹی تشکیل دینے کی ہدایت کی۔صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت کمیٹی کے سربراہ ہوں گے۔ کمیٹی 7روز میں بنیادی اصلاحات کے حوالے سے حتمی سفارشات پیش کرے گی۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ کمیٹی کی سفارشات کی روشنی میں فیصلے کیے جائیں گے۔ ماضی کے حکمرانوں نے پٹوار کلچر کے خا تمے کے خالی نعرے لگائے اورسابق دور میں پٹوار کلچر کے خا تمے کیلئے کوئی عملی اقدام نہیں اٹھا یا گیا۔انہوں نے کہا کہ ریونیو امور سے متعلقہ عوام کی شکایات کا فوری ازالہ ضروری ہے۔اراضی سینٹرز کی تعداد میں اضافہ کر کے عوام کو مزید ریلیف دیں گے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدارنے موبائل اراضی سینٹرز کو جلد فنکشنل کرنے کی ہدایت کی۔صوبائی وزیر قانون راجہ بشارت،چیف سیکرٹری،سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو،پرنسپل سیکرٹری وزیراعلیٰ پنجاب اور اعلی حکام نے اجلاس میں شرکت کی۔ سردار عثمان بزدار نے لائن آف کنٹرول پر شہری آبادی پر بھارتی فوج کی اشتعال انگیزیوں کی شدید مذمت کی ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے بھارتی فوج کی فائرنگ سے نکیال سیکٹر میں بچوں،خواتین سمیت 5زخمی افراد کی جلد صحت یابی کیلئے دعا کی ہے۔وزیراعلیٰ عثمان بزدار نے کہا کہ بوکھلاہٹ کاشکار بھارت شہری آبادی کو نشانہ بنا کر عالمی قوانین اورانسانی حقوق کی پامالی کررہا ہے۔ مودی سرکار کی اشتعال انگیزیاں خطے کے امن کیلئے خطرہ ہیں۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی بہادر مسلح افواج نے بزدل دشمن کو ہمیشہ منہ توڑ جواب دیا ہے۔

عثمان بزدار

مزید :

صفحہ اول -